ناندیڑ میں شیوسینا اور بی جے پی کارکنان کے درمیان تنازع ، حالات پر قابو پانے کیلئے پولیس نے کیا لاٹھی چارج

Nov 06, 2017 11:20 PM IST | Updated on: Nov 06, 2017 11:21 PM IST

ناندیڑ : ایک وقت میں ایک دوسرے کے ساتھ جینے مرنے کی قسمیں کھانے والی بی جے پی اور شیو سینا کے درمیان حالات اب دن بدن کشیدہ سے کشیدہ تر ہوتے جا رہے ہیں ۔ ایک جانب شیو سینا مہاراشٹر حکومت کی تنقید کا کوئی موقع نہیں چھوڑ رہی ہے تو وہیں اس کے لیڈران پچھلے کچھ وقت سے کانگریس لیڈر شپ کی کھل کر تعریف بھی کر رہے ہیں۔ جی ایس ٹی اور نوٹ بندی کی شیو سینا نے کھل کر تنقید کی ہے۔ اس کی وجہ سے اب آئے دن دونوں پارٹیوں کے لیڈروں اور کارکنوں کے درمیان چھوٹی چھوٹی باتوں کو لے کر تصادم ہونے لگا ہے ۔

ناندیڑ میں شیوسینا اور بی جے پی کارکنان کے درمیان تنازع کی وجہ سے حالات کشیدہ ہوگئے ۔ یہ تنازع اس وقت شروع ہوا جب شیوسینا کے ایم ایل اے پرتاب پاٹل چکلی کر کے استعفی کا مطالبہ کرتے ہوئے ان کی ہی پارٹی کے کارکنان ڈھول بجاکر احتجاج کررہے تھے ۔ پرتاب پاٹل پر الزام ہے کہ انہوں نے شیوسینا کا رکن اسمبلی رہتے ہوئے بی جے پی کا ساتھ دیا، جس کی وجہ سے کارپوریشن انتخابا ت میں شیوسینا کو زبردست شکست کا شامنا کرنا پڑا ۔

ناندیڑ میں شیوسینا اور بی جے پی کارکنان کے درمیان تنازع ، حالات پر قابو پانے کیلئے پولیس نے کیا لاٹھی چارج

احتجاج کر رہے شیوسینکوں پر چکلی کےحامیوں نے حملہ کردیا ، جس کی وجہ سے کچھ دیر کےلئے حالات کشیدہ ہوگئے ۔ پولیس نے حالات پر قابو پانے کے لئے لاٹھی چارج کیا ۔ پولیس کے لاٹھی چارج میں گئی افراد زخمی ہوگئے ۔پولیس نے شیوسینا مظاہرین کے علاوہ چکلی کر کے حامیوں کو بھی ہراست میں لیا ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز