قومی اتحاد کی منفرد مثال : گزشتہ 40 برسوں یہاں مسلم بھائی کی کلائی پر راکھی باندھتی ہیں ہندو بہن

Aug 07, 2017 11:18 PM IST | Updated on: Aug 07, 2017 11:18 PM IST

احمد آباد :جہاں ایک طرف ہندوستان کے ماحول کو خراب کرنے کی نا کام کوشش کی جا رہی ہے وہیں ركشابندھن کے تہوار کے موقع پر احمد آباد میں منفرد قومی اتحاد کی مثال دیکھنے کو ملی ، جسے دیکھنے کے بعد کہنا پڑے گا کہ تہوار کی خوشیاں ذات اور مذہب کی حد کو نہیں دیکھتی ۔

گجرات کے موڈاسا ضلع میں رہنے والے مسلم خاندان کے تمام لوگوں کے ہاتھ پر گزشتہ چالیس سالوں سے ایک ہندو بہن راکھی باندھتی ہے ۔ اتنا ہی نہیں ہندو بہن مسلم بھائی کے ساتھ سبھی خوشی اور غم کے موقع پر کھڑی رہتی ہیں ۔ اسی طریقہ سے مسلم بھائی ہندو بہن کے یہاں چھوٹے سے لے کر بڑے سبھی موقع پر شامل ہوتے ہیں ۔

قومی اتحاد کی منفرد مثال : گزشتہ 40 برسوں یہاں مسلم بھائی کی کلائی پر راکھی باندھتی ہیں ہندو بہن

بھائی اور بہن کے رشتے کے لئے مشہور ركشابندھن کےموقع پرمسلم بھائی غلام آزاد کا کہنا ہے کہ یہ رشتہ ہمارے تک نہیں بلکہ ہماری آنے والی نسل تک زندہ رہے ، ایسی اللہ سے دعا کرتے ہیں ۔ غلام آزاد کے مطابق ہماری حقیقی تین بہنیں ہیں ، لیکن ہم نے کبھی یہ نہیں کہا کہ ہماری تین بہنیں ہیں۔ ہم نے ہمیشہ کہا کہ ہماری چار بہنیں ہیں ۔

وہیں پارول بین کا کہنا ہے کہ ہمارا رشتہ مذہب کے اعتبار سے نہیں بلکہ انسانیت کی بنیاد پر ہے ۔ پارول بین کہتی ہیں کہ ہندو اور مسلمان یہ تو ہم نے بنایا ہے ، لیکن اس سے پہلے ہمیں انسانیت کے مذہب کو دیکھنا چاہئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز