راجستھان : مذہبی مقام پر قبضہ کو لے کر فرقہ وارانہ تنازع ، آگ زنی اور پتھراو، پانچ زخمی ، کرفیو نافذ

May 12, 2017 12:34 PM IST | Updated on: May 12, 2017 03:56 PM IST

ادے پور: راجستھان میں بانسواڑا شہر کے کوتوالی تھانہ حلقہ میں کل دیر رات دو فرقوں کے درمیان ہوئی آگ زنی اور پتھراؤ کے واقعہ میں دو پولیس اہلکاروں سمیت پانچ افراد زخمی ہو گئے۔ اس واقعہ کے بعد انتظامیہ نے دفعہ 144 نافذ کر دی۔

ایڈیشنل پولس سپرنٹنڈنٹ گنپت مہاور نے آج بتایا کہ شہر کے كھاٹ واڑہ اور گوركھملي علاقے میں ایک مذہبی مقام پر قبضے کے سلسلے میں گذشتہ رات دو فرقوں کے لوگوں کے درمیان تنازع ہو گیا۔

راجستھان : مذہبی مقام پر قبضہ کو لے کر فرقہ وارانہ تنازع ، آگ زنی اور پتھراو، پانچ زخمی ، کرفیو نافذ

file photo

اس واقعہ میں دونوں فرقوں کے درمیان آگ زنی اور پتھر بازی ہوئی جس میں دو موٹر سائیکلوں کو بھی آگ کے حوالے کر دیا۔ پتھراؤ کے واقعہ میں دو پولس اہلکار اور تین دیگر افراد کے چوٹیں آئی ہیں۔ واقعہ کے بعد علاقے میں حکم امتناعی کا نفاذ کردیا گیا ہے۔ علاقے میں اب بھی کشیدگی ہے۔

ضلع کلکٹر بھگوتی پرساد اورپولس سپرنٹنڈنٹ كالورام راوت سمیت تمام اعلی افسران موقع پر موجود ہیں۔ علاقے کے سات تھانوں کی پولس فورس کو جائے حادثہ پرتعینات کیا گیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز