Live Results Assembly Elections 2018

ووٹ ڈالنے کے بعد وزیر اعظم کے روڈ شو پر بھڑکی کانگریس، الیکشن کمیشن پر لگایا یہ سنگین الزام

احمد آباد۔ کانگریس نے الیکشن کمیشن پر الزام لگایا ہے کہ وہ وزیر اعظم نریندر مودی کے نجی سکریٹری کی حیثیت سے کام کر رہا ہے۔

Dec 14, 2017 02:56 PM IST | Updated on: Dec 14, 2017 02:59 PM IST

احمد آباد۔ کانگریس نے الیکشن کمیشن پر الزام لگایا ہے کہ وہ وزیر اعظم نریندر مودی کے نجی سکریٹری کی حیثیت سے کام کر رہا ہے۔ کانگریس نے کہا کہ  گجرات اسمبلی انتخابات کے دوسرے اور آخری مرحلے میں آج یہاں شہر کے رانپ علاقہ کے نشان اسکول بوتھ پر ووٹ دینے کے بعد نریندر مودی نے روڈ شو کر کے انتخابی ضابطہ اخلاق اور قانون کی دھجیاں اڑا دی ہیں۔ کانگریس نے الیکشن کمیشن اور وزیر اعظم پر سخت حملہ کرتے ہوئے کہا کہ الیکشن کمیشن بی جے پی کی کٹھ پتلی ہو گیا ہے اور وہ اس کے اشاروں پر ہی کام کر رہا ہے۔

کانگریس نے مسٹر مودی پر آج ووٹنگ سے پہلے روڈ شو کرنے کا الزام لگاتے ہوئے الیکشن کمیشن سے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرنے کی شکایت درج کرائی ہے۔ اس کا الزام ہے کہ مسٹر مودی نے ہوائی اڈے سے نکلنے کے بعد اور رانپ میں تقریبا تین کلومیٹر طویل روڈ شو کیا۔ واضح رہے کہ سال 2014 میں اسی چوکی پر ان کی ووٹنگ کے دوران نامہ نگاروں سے بات کرنے اور مبینہ طور پر بی جے پی کا انتخابی نشان دکھانے کے لئے الیکشن کمیشن نے معاملے درج کرائے تھے۔

ووٹ ڈالنے کے بعد وزیر اعظم کے روڈ شو پر بھڑکی کانگریس، الیکشن کمیشن پر لگایا یہ سنگین الزام

ووٹ ڈالنے کے بعد اپنی انگلی پر لگی سیاہی کو دکھاتے ہوئے پی ایم مودی۔

قبل ازیں، بی جے پی کا گڑھ کہے جانے والے سابرمتی اسمبلی حلقہ کے تحت اس بوتھ پر ووٹنگ کے لئے مسٹر مودی مہاراشٹر سے یہاں ہوائی اڈے پر آنے کے بعد دوپہر تقریبا 12 بج کر دس منٹ پر براہ راست نشان اسکول پہنچے۔ وہ ایک عام ووٹر کی طرح پانچ منٹ تک قطار میں کھڑے رہے۔ باہر ان کو دیکھنے کے لئے سڑک کےکنارے اور ارد گرد کے گھروں کی چھتوں پرہزاروں لوگوں کی بھیڑ مودی مودی کے نعرے لگانے لگی۔ وہ قطار میں اپنے آگے کھڑے ووٹروں سے بات کرتے رہے اور درمیان میں ہاتھ ہلا کر باہر کی بھیڑ کا سلام بھی کرتے رہے۔

اس موقع پر سبکدوش ہونے والے رکن اسمبلی اور بی جے پی امیدوار اروند پٹیل بھی موجود تھے۔ مسٹر مودی کی پرچی دکھانے اور ووٹر لسٹ پر اپنے نام کے سامنے دستخط کرنے پر ایک خاتون ووٹنگ عملہ نے ان کی انگلي میں سیاہی لگا دی اور انہوں نے ووٹ دیا۔ بعد میں باہر نکلنے پر وہ انگلي میں لگی سیاہی کو دکھاتے ہوئے بھیڑ کے درمیان سے گزرتے رہے۔ تقریبا پانچ منٹ تک وہ پیدل ہی سڑک پر اسی انداز میں چلتے رہے۔

صبح ٹوئٹر پر لوگوں سے بڑی تعداد میں ووٹ کی اپیل کرنے والے مسٹر مودی لوگوں سے ان کی طرح ووٹ ڈالنے کی خاموش اپیل کرتے رہے۔ واضح رہے کہ ان کے چھوٹے بھائی پنکج مودی کے ساتھ رہنے والی ان کی 97 سال کی ماں ہیرابین نے گاندھی نگر شمال سیٹ پر صبح ہی ووٹ دیا تھا۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز