وزیر اعظم مودی تین طلاق پر دکھا رہے ہیں مسلم خواتین کے تئیں جھوٹی ہمدردی: کانگریس لیڈر

Apr 25, 2017 04:33 PM IST | Updated on: Apr 25, 2017 04:34 PM IST

جے پور۔ کانگریس اقلیتی شعبہ کے قومی صدر خورشید حسین منگل کو جھنجھنو آئے۔ انہوں نے تین طلاق پر بڑا بیان دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کو مسلم خواتین کے تئیں اگر اتنی ہمدردی ہے تو انہیں سب سے پہلے گجرات کے 2002 فسادات کی شکار احمد آباد کی ذکیہ جعفری جو انصاف کے لئے بھٹک رہی ہیں، انہیں انصاف دینا چاہئے۔ جتنی خواتین نے اپنے شوہر کھوئے ہیں، اپنے بچے کھوئے ہیں ان سے آپ کو کوئی ہمدردی نہیں ہے۔ مسلم خواتین کے تئیں ہمدردی ہے تو انہیں انصاف دینا چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ جہاں بنارس سے نریندر مودی الیکشن لڑتے ہیں وہاں پر آشرموں میں تقریباً 38 ہزار سے زائد ہندو عورتیں رہ رہی ہیں، متھرا کے آشرموں میں تقریباً 16 ہزار کے قریب طلاق شدہ اور بیوائیں رہ رہی ہیں۔ ان کے لئے وزیر اعظم کے دل میں کوئی درد نہیں ہے۔ انہوں نے سوال کیا کہ کیا پی ایم مودی کو ان خواتین کے تئیں ہمدردی نہیں ہونی چاہئے۔ یہ خواتین کس حالت میں جی رہی ہیں، انہوں نے کبھی سوچا ہے۔

وزیر اعظم مودی تین طلاق پر دکھا رہے ہیں مسلم خواتین کے تئیں جھوٹی ہمدردی: کانگریس لیڈر

یہ پوچھے جانے پر کہ یوپی میں تین طلاق کے معاملے میں مسلم خواتین نے بی جے پی کو ووٹ دئیے، اس بات کو خورشید احمد نے مسترد کر دیا۔ انہوں نے کہا کہ مسلم خواتین نے بی جے پی کو کوئی ووٹ نہیں دیے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز