گجرات میں کانگریس میں بغاوت ، مزید 3 ممبران اسمبلی نے دیا استعفی ، احمد پٹیل کا راجیہ سبھا پہنچنا مشکل

Jul 28, 2017 02:47 PM IST | Updated on: Jul 28, 2017 05:49 PM IST

گاندھی نگر: گجرات میں راجیہ سبھا کی تین نشستوں کے لئے الیکشن سے عین قبل کانگریس کے تین مزید اراکین اسمبلی نے آج پارٹی اوراسمبلی کی رکنیت سے استعفی دے دیا جس کے ساتھ پچھلے 24 گھنٹے میں پارٹی چھوڑنے والے کانگریسی ایم ایل اے کی تعداد بڑھ کرچھ ہوگئی۔ آج استعفی دینے والے اسمبلی ارکان میں کانگریس کے قدآور رہنما اور امول ڈیری کے نام سے مشہور گجرات کے کھیڑا ضلع کوآپریٹیو ملک پرودیسنگ فیڈریشنگ کے چیئرمین رام سنگھ پرمار شامل ہیں۔ان کے علاوہ واشندہ کے ایم ایل اے شنا بھائی چودھری نے کل دیر رات اور بالا شنور کے کانگریسی ایم ایل اے مان سنگھ چوہان نے آج اسمبلی اسپیکر رمن بھائی وورا کو اپنا استعفی سونپ دیا۔ ان کے بھی بی جے پی میں شامل ہونے کا امکان ہے۔

پارٹی کے تین اراکین نے کل استعفی دیا تھا اور بھارتیہ جنتا پارٹی میں شامل ہوگئے تھےان میں سے ایک بلونت سنگھ راجپوت کو بی جے پی میں راجیہ سبھا الیکشن کے لئے اپنا امیدوار قرارد یا ہے۔ مسٹر سنگھ نےآج بی جےپی قومی صدر امیت شاہ اور مرکز ی وزیر اسمرتی ایرانی کےساتھ باقاعدہ طور پر کاغذات نامزدگی داخل کئے۔اب اس الیکشن کے لئے کانگریس کی صدر سونیا گاندھی کے سیاسی مشیر احمد پٹیل سمیت کل چار امیدوار میدان میں ہیں۔

گجرات میں کانگریس میں بغاوت ، مزید 3 ممبران اسمبلی نے دیا استعفی ، احمد پٹیل کا راجیہ سبھا پہنچنا مشکل

کانگریس چھوڑنے والے ایم ایل اےگجرات کے قدرآور رہنما شنکر سنگھ واگھیلا کی قریبی بتائے جاتے ہیں۔مسٹر واگھیلا نے 21 جولائی کو کانگریس سے ناتہ توڑ لیا تھا، ایسی قیاس آرائی ہورہی تھی کہ کانگریس کے کچھ اور ایم ایل اے پارٹی چھوڑ سکتے ہیں۔جس کی وجہ سے احمد پٹیل کے مسلسل پانچویں بار راجیہ سبھا کے لئے منتخب ہونے میں مشکلیں آسکتی ہیں۔مسٹر احمد اپنے کاغذات نامزدگی داخل کرچکے ہیں۔ کل 182 اراکین پر مشتمل اسمبلی میں بی جےپی کے پاس ایک باغی سمیت 122 ایم ایل اے ہیں۔ چھ اراکین اسمبلی کے استعفی کے بعد اب کانگریس کے پاس 51 ایم ایل اے رہ گئے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز