بی ایم سی میں بی جے پی کو روکنے کے لئے شیوسینا کو حمایت دے سکتی ہے کانگریس ؟

Feb 24, 2017 02:15 PM IST | Updated on: Feb 24, 2017 02:15 PM IST

ممبئی : برہن ممبئی نگر نگم (بی ایم سی) میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کو روکنے کے لئے ممبئی کانگریس میں شیوسینا کو حمایت دینے کے معاملہ پر غور و فکر کیا جارہا ہے ۔ ممبئی کانگریس کے کچھ لیڈر چاہتے ہیں کہ بی ایم سی میں میئر انتخابات کے دوران کانگریس کو شیو سینا کی حمایت کرنی چاہئے۔ خیال رہے کہ بی ایم سی میں کانگریس کے پاس 31 سيٹیں ہیں۔

ممبئی کانگریس میں اس بات پر بھی بحث ہو رہی ہے کہ میئر انتخابات کے دوران یا تو کانگریس شیوسینا کی حمایت کر دے یا پھر واک آؤٹ کر دے ۔ دونوں ہی صورتوں میں شیوسینا کا میئر پر قبضہ ہو جائے گا۔ تاہم اس معاملہ پر حتمی فیصلہ اعلی کمان پر چھوڑ دیا گیا ہے۔ادھر بی جے پی ترجمان کیشو اپادھیائے نے اس معاملہ میں کہا کہ بی جے پی کی حکمت عملی پارٹی کی کور کمیٹی طے کرے گی۔

بی ایم سی میں بی جے پی کو روکنے کے لئے شیوسینا کو حمایت دے سکتی ہے کانگریس ؟

وہیں جمعہ کو بی ایم سی میں میئر کے عہدہ کو لے کر رسہ کشی کے درمیان ادھو ٹھاکرے شیو سینا کے تمام کونسلر کی میٹنگ بلائی ہے۔ تاہم ادھو ٹھاکرے نے جمعرات کو اعلان کیا تھا کہ پارٹی میئر کا عہدہ برقرار رکھے گی۔

واضح رہے کہ جمعرات کو آئے بی ایم سی انتخابات کے نتائج میں کسی پارٹی کو واضح اکثریت نہیں ملی ہے۔ شیوسینا نے 84 اور بی جے پی نے 82 سیٹوں پر جیت درج کی ہے۔ وہیں کانگریس کی جھولی میں 31 سیٹ آئی تو این سی پی کو 9 سیٹ سے اکتفا کرنا پڑا جبکہ 11 آزاد امیدوار بھی الیکشن جیتے ہیں۔

وہیں ایم این ایس کو 7 نشستیں، ایم آئی ایم کو 3 نشستیں ملی ہیں ، جبکہ کبھی مافیا ڈان رہے ارون گاؤلی کی پارٹی اکھل بھارتیہ سینا کو ایک سیٹ ملی ہے اور یہ سیٹ ان کی بیٹی گیتا گاؤلی نے جیتی ہے۔ بتا دیں کہ واضح اکثریت کے لئے کسی بھی پارٹی یا اتحاد کو 114 کونسلر کی ضرورت ہوتی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز