فرنویس کابینہ کے ایک اور وزیر مشکل میں ، سبھاش دیشمکھ پر بدعنوانی کا الزام، اپوزیشن استعفی پر بضد

Aug 04, 2017 09:09 PM IST | Updated on: Aug 04, 2017 09:09 PM IST

ممبئی : وزیر تعمیرات پرکاش مہتا کے خلاف بدعنوانی کا معاملہ اور ان کے استعفیٰ طلب کرنے کے بعد اپوزیشن کانگریس این سی پی نے آج یہاں وزیر صنعت سبھاش دیشمکھ کو اپنا نشانہ بنایا اور الزام عائد کیا کہ انہوں نے ایم آئی ڈی سی کی چار سو ایکڑ پر مشتمل زمین کو لین دین کے معاملے میں قانون کو بالا طاق رکھ دیا تھا ۔ ریاستی قانون ساز کونسل میں اپوزیشن لیڈر دھنناجے منڈے نے الزام لگایا کہ ناسک میں 400 ایکڑ پر مشتمل ایک قطعہ اراضی کو وزیر سبھاش دیشمکھ نے اس کے مالک کو واپس کردیا اور اس میں تمام قانون کو بالائے طاق رکھتے ہوئے منظوری دی گئی ۔

اپوزیشن لیڈر نے الزام عائد کیا کہ وزیر صنعت سبھاش دیشمکھ نے جو بدعنوانی کی ہے اس کی اعلیٰ سطحی تحقیقات کی جائے اور انھیں ان کے عہدے سے ہٹایا جائے ۔ اس معاملے کو لے کر اپوزیشن نے کونسل میں ہنگامہ بھی کیا جس کے وجہ سے کاروائی کو ملتوی کرنا پڑا ۔

فرنویس کابینہ کے ایک اور وزیر مشکل میں ، سبھاش دیشمکھ  پر بدعنوانی کا الزام، اپوزیشن استعفی پر بضد

دیویندر فڑنویس، فائل فوٹو: پی ٹی آئی

اسی درمیان وزیر تعمیرات کے استعفیٰ کا معاملہ آج پھر ریاستی اسمبلی میں گونجا جس پر ایوان کی کاروائی ایک مرتبہ ملتوی کی گئی جس کےپرکاش مہتا نے اخبار نویسیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس معاملے میں بے قصور ہے اور اگر وزیراعلیٰ کہے تو وہ استعفیٰ دینے اور ہر جانچ کے لئے تیار ہیں ۔ نیز دوران تحقیقات وہ اپنے عہدے پر قائم نہیں رہیں گے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز