ممبئی کے سی ایس ٹی پرٹرین میں خاتون کے سامنے فحش حرکتیں کرنے والا گرفتار

Jul 13, 2017 03:07 PM IST | Updated on: Jul 13, 2017 03:07 PM IST

ممبئی۔  ممبئی میں مشہورچھترپتی شیواجی مہاراج ٹرمنس (سی ایس ٹی ) اسٹیشن پر کھڑی ٹرین میں لڑکی کو دیکھ کر فحش حرکت کرنے والے 20 سالہ اشوک پردھان نام کے شخص کو جی آر پی نے گرفتار کر لیا ہے۔ یہ واقعہ 29 جون صبح 5:45 بجے پیش آیا۔ لڑکی کو تپوون ایکسپریس میں جانا تھا، جس کے انتظار میں وہ اپنے مخصوص کوچ کے سامنے پلیٹ فارم پر کھڑی تھی۔ اس ٹرین میں پہلے سے ہی موجود ملزم لڑکی کو دیکھ کر مشت زنی کرنے لگا اور کوچ کی روشنی جلنے کے بعد بھی اس نے حرکتیں جاری رکھیں۔

بتایا جاتا ہے کہ اس دوران لڑکی نے ملزم کی حرکتوں کو موبائل میں قید کر لیا اور اس کی شکایت جی آر پی سے بھی کی۔ ویڈیو کے مطابق جی آر پی کے جوان کو لڑکے کے بارے میں بتایا گیا، جائے وقوعہ پر لے جاکر لڑکی نے جوان کو ملزم کی طرف اشارہ بھی کیا، لیکن کانسٹیبل نے مدد کرنے کے بجائے کہا 'لڑکے کا بھی اسی کوچ (تپوون، ڈی ۔1) میں ہی ٹکٹ محفوظ ہوگا،اس لیے لڑکی ارد گرد کہیں بیٹھ جائے۔ لڑکی نے کہا کہ جب پولیس سے مدد نہیں ملی تب اس نے لڑکے کا ویڈیو وزارت ریلوے کے ٹوئٹر ہینڈل پر ٹویٹ کر دیا۔ ایک ٹویٹ پر 'بچوں کے لئے دودھ لانے والی ریلوے نے ویڈیو کا کوئی جواب نہیں دیا۔ اس دوران لڑکی وزیر ریلوے سریش پربھو سے بھی سوال کرتی رہی، لیکن ان کی جانب سے بھی کوئی جواب نہیں ملا۔

ممبئی کے سی ایس ٹی پرٹرین میں خاتون کے سامنے فحش حرکتیں کرنے والا گرفتار

اے این آئی

جب ویڈیو یوٹیوب پر پوسٹ ہوا اورپوسٹ وائرل ہو گئی، تب 11 جولائی کو سنٹرل ریلوے ڈی آرایم نے ویڈیو پر ریسپانڈ کیا اور ٹویٹر میسج آگے بڑھایا گیا۔ شام تک میڈیا میں خبر پھیلنے کے بعد جی آر پی بھی فعال ہو گئی اور ملزم اشوک پردھان کو گرفتار کر لیا گیا۔ یہ مسلسل دوسرا واقعہ ہے جب سوشل میڈیا پر ایسی حرکت وائرل ہونے پر کارروائی کی گئی ہے۔اس سے پہلے بھی ملنڈعلاقہ کی ایک 22 سالہ عورت نے لوکل ٹرین میں مخصوص عضو دکھانے والے شخص کے خلاف بورولی جی آر پی میں ایف آئی آر درج کرائی تھی۔ 15 جون کا واقعہ جب فیس بک پر وائرل ہوا تب پولیس نے کارروائی کی۔ پوسٹ میں لڑکی نے یہ بھی بتایا تھا کہ اس دوران اس نے ہیلپ لائن سے مدد مانگی، لیکن اس کے کال پرجواب نہیں دیاگیا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز