گجرات : اچھے کپڑے اور گلے میں چین پہننے پر دلت نوجوان کی پٹائی

گجرات میں دلت نوجوان کی پٹائی کا ایک اور معاملہ سامنے آیا ہے۔ پٹائی کا الزام اعلی ذات کے نوجوانوں پر لگا ہے۔

Jun 14, 2018 09:46 PM IST | Updated on: Jun 14, 2018 09:46 PM IST

احمد آباد : گجرات میں دلت نوجوان کی پٹائی کا ایک اور معاملہ سامنے آیا ہے۔ پٹائی کا الزام اعلی ذات کے نوجوانوں پر لگا ہے۔ یہ واقعہ 12 جون کو احمد آباد کے وٹھلاپور گاوں میں پیش آیا ، جہاں اچھے کپڑے اور گلے میں چین پہننے اور خود کو راجپوت بتانے پر دلت نوجوان کی پٹائی کردی گئی۔ متاثرہ نوجوان کا کہنا ہے کہ پولیس نے اس کی شکایت بھی درج نہیں کی۔ ممبر اسمبلی اور دلت لیڈر جگنیش میوانی نے جلد سے جلد کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

دلت نوجوان بھاویش کے مطابق وہ بیچارجی ( پاٹن) گیا تھا ۔ اس نے الزام لگایا کہ دو راجپوت لڑکوں نے اس کے کپڑے اور گلے میں چین دیکھ کر دھمکی دی۔ اس کے بعد وہ اس کو بائیک پر بیٹھا کر لے گئے اور اس کی بے رحمی سے پٹائی کردی۔ واقعہ کے 48 گھنٹے بعد بھی پولیس نے شکایت درج نہیں کی۔

گجرات : اچھے کپڑے اور گلے میں چین پہننے پر دلت نوجوان کی پٹائی

علامتی تصویر

ادھر اس معاملہ پر جگنیش میوانی نے کہا کہ 24 گھنٹوں میں ملزموں کا پکڑا جانا چاہئے۔ دلتوں پر ہورہے مظالم کے معاملہ میں اگر شکایت نہیں بھی ہوتی ہے تو ایس پی اور آئی جی کو خود سے ایکشن لینا چاہئے۔ اونا دلت سانحہ کے متاثرین کو اگر سزا ملی ہوتی تو یہ نوبت کبھی نہیں آتی۔

خیال رہے کہ گجرات میں گزشتہ دو سالوں میں دلتوں کے ساتھ مار پیٹ کے کئی واقعات سامنے آئے ہیں۔ اسی سال مئی میں 20 دلتوں نے راجکوٹ میں ان کی زمیں ہڑپنے کی مخالفت میں خود سوزی کی کوشش کی تھی۔ مئی میں ہی بناس کانٹھا ضلع میں ایک دلت پولیس کانسٹبل نے شادی کارڈ میں نام کے پیچھے سنگھ لگایا تو اعلی ذات کےلوگوں نے کافی ہنگامہ کیا تھا ۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز