مہاراشٹر اسٹیٹ وقف بورڈ کو فوری طور پر تحلیل کیا جائے: شبیر احمد انصاری

Nov 21, 2017 07:59 PM IST | Updated on: Nov 21, 2017 07:59 PM IST

اورنگ آباد۔ تحریک اوقاف نے مہاراشٹر اسٹیٹ وقف بورڈ کے ممبران پر کرپشن  میں ملوث ہونے کا الزام عائد کرتے ہوئے ریاست کے وزیراعلی سے بورڈ کو فوری طور پر تحلیل کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔ تحریک اوقاف کے صدر شبیر انصاری نے ایک پریس کانفرنس میں یہ مطالبہ کیا۔ اس موقع پرآل انڈیا مسلم مجلس مشاورت کے جنرل سکریٹری مجتبی فاروق بھی موجود تھے ۔ مہاراشٹر اسٹیٹ وقف بورڈ کی تالہ بندی کی پاداش میں گرفتاری اورضمانت پر رہائی کے بعد تحریک اوقاف کےصدر شبیراحمد انصاری نے میڈیا سے خطاب کیا۔

انصاری کا الزام ہےکہ ریاستی وقف بورڈ کو کرپٹ ممبران نے ہائی جیک کرلیا ہے، اس لیے بورڈ کو فوری تحلیل کیا جائے۔ ان کا کہنا ہے کہ اس مطالبےکو لیکر وہ وزیراعلی دیویندر فڑنویس سے ملاقات کریں گے ۔ شبیر انصاری کےمطابق حکومت مہاراشٹر اقلیتی اداروں کے تعلق سےقطعی سنجیدہ نہیں ہے۔ وقف بورڈ کی تالہ بندی اس کی مثال ہے۔

مہاراشٹر اسٹیٹ وقف بورڈ کو فوری طور پر تحلیل کیا جائے: شبیر احمد انصاری

شبیر احمد انصاری ۔ صدر تحریک اوقاف، مہاراشٹر

انصاری نےسوال اٹھایا کہ کھربوں روپئےمالیت کی وقف جائیدادوں کا جہاں ریکارڈ موجود ہو، وہاں ایسی غفلت کہ ایک سیکورٹی گارڈ بھی نہیں اور نہ ہی خفیہ ایجنسیوں کو اس کی خبر ہوئی۔ ایسے میں اگر کوئی شرانگیزی  پر اتر آئے تو کون ذمہ دار ہوگا۔  انصاری کے مطابق بورڈ ممبران اپنی کھال بچانے کے فراق میں تحریک اوقاف کوکچلنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ آل انڈیا مجلس مشاورت کے جنرل سکریٹری مجتبی فاروق نے اقلیتی اداروں کےتحفظ کی خاطرتحریک اوقاف کی حمایت کا اعلان کیا ہے۔

مجتبی فاروق ۔ جنرل سکریٹری، آل انڈیا مسلم مجلس مشاورت مجتبی فاروق ۔ جنرل سکریٹری، آل انڈیا مسلم مجلس مشاورت

حکومت مہاراشٹر کی جانب سے پائلٹ پروجیکٹ کے تحت  دوسرے سروے کو انصاری نے  چھلاوا قرار دیا اورکہا کہ تحریک کی نمائندگی کی وجہ سے حکومت نےسیکنڈ سروے روک دیا ہے۔ انصاری نے وقف بورڈ کی سیکیورٹی کو یقینی بنانے اور وقف ریکارڈ کو کمپیوٹرائزڈ کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز