الیکشن کمیشن نے کانگریس کی درخواست قبول کرتے ہوئے دو باغی اراکین اسمبلی کے ووٹ منسوخ کئے

Aug 09, 2017 09:41 AM IST | Updated on: Aug 09, 2017 09:41 AM IST

گاندھی نگر۔ وزیر اعظم نریندر مودی کی آبائی ریاست گجرات میں  اپوزیشن اراکین اسمبلی کی کم از کم نو کراس ووٹنگ کے درمیان تین سیٹوں پر ہوئے راجیہ سبھا انتخابات کے بعد ان میں سے 2 ووٹوں کو تکنیکی بنیاد پر منسوخ کرنے کی کانگریس کی مانگ کو دیر رات الیکشن کمیشن نے قبول کر لیا جس کے بعد ووٹوں کی گنتی کا عمل شروع ہو گیا۔ کمیشن نے دیر رات جاری بیان میں کہا ہے کہ اس نے ووٹنگ سے متعلق شکایت کا ویڈیو دیکھا ہے اور اس سے واضح ہے کہ دونوں نے ووٹنگ کے قوانین کی خلاف ورزی کی ہے اس لئے ان کے ووٹ منسوخ ہونے چاہئیں۔

کانگریس کے ریاستی صدر بھرت سنگھ سولنکی نے کہا کہ کمیشن نے جمہوریت میں لوگوں کے اعتماد کو بحال کیا ہے۔ کانگریس امیدوار احمد پٹیل سب سے زیادہ ووٹوں سے جیت جائیں گے۔ بی جے پی اور کانگریس دونوں کے لئے وقار کا سوال بنے اس انتخابات میں بی جے پی صدر امت شاہ، مرکزی وزیر اسمرتی ایرانی اور کانگریس صدر سونیا گاندھی کے سیاسی سیکرٹری احمد پٹیل سمیت چار امیدوار ہیں۔

الیکشن کمیشن نے کانگریس کی درخواست قبول کرتے ہوئے دو باغی اراکین اسمبلی کے ووٹ منسوخ کئے

الیکشن کمیشن آف انڈیا: فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز