مودی حکومت نے مسلمانوں کی ترقی کے لئے انہیں بااختیار بنانے کا راستہ ہموار کیا ہے: نقوی

May 13, 2017 09:02 PM IST | Updated on: May 13, 2017 09:02 PM IST

ممبئی۔  اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے آج یہاں کہا کہ گذشتہ تین برسوں کے دوران مرکز کی مودی حکومت نے مسلمانوں کی ترقی کے لئے ’’خوشامد کی پالیسی‘‘ کے بجائے انہیں’’بااختیار بنانے‘‘ کی پالیسی پر عمل کیا ہے۔ مسٹر نقوی نے کہا کہ گذشتہ کئی دہائیوں سے سیکولرازم کے سیاسی سورماوں نے مسلمانوں کو بااختیار بنانے کے بجائے صرف منہ بھرائی کی سیاست کی ہے۔ ممبئی میں اقلیتی امور کی وزارت اور مہاراشٹر اقلیتی ترقیاتی وزارت کی رابطہ میٹنگ میں مسٹر نقوی نے کہا کہ سیاسی مفادات کی وجہ سے منہ بھرائی کی سیاست ہمہ گیر ترقی کی سب سے بڑی دشمن رہی ہے ۔ اس لئے مودی حکومت نے منہ بھرائی کے بجائے بااختیار بنانے کا ماحول پیدا کرکے لوگوں میں ان کی ترقی کے تئیں ٹھوس اعتماد پیدا کیا ہے۔

مسٹر نقوی نے کہا کہ گذشتہ تین برسوں کے دوران اقلیتی امور کی وزارت نے اقلیتوں کی بہتر تعلیم، اسکل ڈیولپمنٹ ، روزگار پر مبنی منصوبوں کو ضرورت مند لوگوں تک ایمانداری سے پہنچایا ہے او رتھری ای یعنی ایجوکیشن، ایمپلائمنٹ اور امپاورمنٹ کے ذریعہ اقلیتوں کو ترقی کے اصل دھارے سے جوڑا ہے۔

مودی حکومت نے مسلمانوں کی ترقی کے لئے انہیں بااختیار بنانے کا راستہ ہموار کیا ہے: نقوی

اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مملکت مختار عباس نقوی مہاراشٹر میں اقلیتوں کی ترقی کے وزیر ونود تاوڑے کے ساتھ ممبئی میں ایک رابطہ میٹنگ کے دوران۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز