این ایس اے کے تحت مسلمانوں پر ہوئی کاروائی تو مہاراشٹر کے سابق لیڈر نے کمل ناتھ سے پوچھا سوال

بتا دیں کہ، مدھیہ پردیش کے کھنڈوا ضلع انتظامیہ نے گئوکشی کے معاملہ میں تین ملزمین پر این ایس اے کے تحت کاروائی کی ہے

Feb 07, 2019 05:53 PM IST | Updated on: Feb 07, 2019 06:09 PM IST

مہاراشٹر کے سابق وزیر عارف خان نے مدھیہ پردیش نیشنل سیکورٹی ایکٹ (این ایس اے) کے تحت ہوئی کاروائی کو لے کر کمل ناتھ حکومت سے سوال پوچھے ہیں۔ مہاراشٹر کے سابق وزیر عارف خان نے کمل ناتھ حکومت سے پوچھا کہ بی جے پی کی حکومت میں مسلمانوں پر این ایس اے لگے تو سمجھ میں آتا ہے، لیکن ایم پی میں کانگریس کی کمل ناتھ حکومت این ایس اے لگا رہی ہے، اسے کیا سمجھا جائے۔

بتا دیں کہ، مدھیہ پردیش کے کھنڈوا ضلع انتظامیہ نے گئوکشی کے معاملہ میں تین ملزمین پر این ایس اے کے تحت کاروائی کی ہے۔ گئوکشی سے فرقہ وارانہ تشدد ہونے کا خدشہ تھا۔ ریاست میں کانگریس کی حکومت بننے کے بعد گئوکشی پر این ایس اے کی یہ پہلی کاروائی ہے۔

این ایس اے کے تحت مسلمانوں پر ہوئی کاروائی تو مہاراشٹر کے سابق لیڈر نے کمل ناتھ سے پوچھا سوال

کمل ناتھ: فائل فوٹو

Loading...

یہ ہے معاملہ

کھنڈوا کے کھرکلی گاوں میں ندی کے کنارے گوشت کے ٹکڑے کاٹنے اور اس کا ماس نکالنے کی اطلاع پولیس کو ملی تھی۔ اس کے بعد موگھٹ پولیس نے موقع پر پہنچ کر ملزمین کو ہتھیار کے ساتھ حراست میں لے لیا۔ گرفتار ملزمین میں سے دو ملزم  راجو عرف ندیم اور شکیل اور اعظم  کو گئوکشی  کے معاملہ میں پہلے بھی گرفتار کیا جا چکا ہے۔ کھنڈوا کے ایس پی سدھارتھ بہوگنا کی پہل پر کھنڈوا کلیکٹر وشیش گڑپالے نے تینوں ملزمین کے خلاف نیشنل سیکورٹی ایکٹ (این ایس اے) کے تحت کاروائی کی۔

 

 

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز