اب دلت پر مظالم کے خلاف ایوراڈ واپسی کا دوڑ شروع ، معروف دلت صحافی سنیل جادھو نے لوٹایا ایوارڈ ، کہی یہ بات

May 27, 2017 10:04 AM IST | Updated on: May 27, 2017 10:04 AM IST

احمد آباد : گجرات میں دلت آتھر اور صحافی سنیل جادھو نے اپنا "مہاتما پھلے سروشیشٹھا دلت پترکار ایوارڈ" واپس لوٹا دیا ہے ۔ گزشتہ جمعہ (26 مئی) کو جادھن نے اپنا ایوارڈ واپس لوٹانے کا فیصلہ کیا ۔ رپورٹوں کے مطابق جادھو نے اپنے اس فیصلہ کی وجہ ریاست میں دلتوں پر ظلم کو بتایا ہے ۔جادھو کو سال 2011 میں یہ ایوارڈ ملا تھا ۔ ایوارڈ کے ایک حصہ کے طور پر 25 ہزار روپے کا چیک بھی دیا گیا تھا ۔ وہیں جادھو نے ایوارڈ واپسی کا فیصلہ کرنے کے بعد راج کوٹ میں بھیم آرمی کی ریلی میں بھی شرکت کی ۔ ریلی ضلع کلکٹر وکرم پانڈے کے دفتر کے باہر منعقد کی گئی تھی ۔

رپورٹوں کے مطابق کلکٹریٹ پر تنظیم کی طرف سے دلتوں کے خلاف مظالم کے معاملات کو لے کر شکایت کی گئی ۔ تحریری شکایت میں جادھو نے کہا کہ مرکز اور ریاستی حکومتیں دلتوں کے خلاف تشدد کو روک پانے میں ناکام ثابت ہو رہی ہیں ۔ میں اونا میں دلتوں کے خلاف تشدد کے واقعہ سے کافی مجروح ہوا تھا ۔ وہیں حال ہی میں سہارنپور اور شببرپور میں دلتوں کے خلاف تشدد سے بھی میں بہت مجروح ہوں ۔ جادھو نے آگے کہا کہ اونا واقعہ کے بعد گجرات حکومت دلتوں کی سیکورٹی میں ناکام ثابت ہوئی ہے ۔

اب دلت پر مظالم کے خلاف ایوراڈ واپسی کا دوڑ شروع ، معروف دلت صحافی سنیل جادھو نے لوٹایا ایوارڈ ، کہی یہ بات

غور طلب ہے گزشتہ ایک ماہ سے اتر پردیش کے سہارنپور میں کشیدگی کی صورتحال ہے اور کئی پرتشدد واردات بھی ہو چکی ہیں ۔ گزشتہ 6 مئی کو شببيرپور گاؤں میں مہاراجہ پرتاپ جینتی کے موقع پر ڈی جے بجانے کو لے کر راجپوت اور دلت سماج میں تنازع ہونے کے بعد تشدد بھڑک اٹھا تھا  ۔ وہیں نسلی تشدد کے واقعات کی جانچ کے لئے خصوصی تفتیشی ٹیم قائم کرنے کے لئے دائر کی گئی پٹیشن پر سپریم نے فوری سماعت سے انکار کر دیا ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز