گجرات میں پھر اونا واقعہ دوہرانے کی کوشش ، مردہ گائے کی کھال اتارنے پر دلت کنبہ کی جم کر پٹائی

Aug 15, 2017 07:55 PM IST | Updated on: Aug 15, 2017 08:02 PM IST

احمد آباد : گجرات میں اونا سانحہ کو ایک مرتبہ پھر دوہرانے کی کوشش کی گئی ہے۔ اعلی ذات کے کچھ لوگوں کے ذریعہ مردہ گائے کی کھالنے اتارنے پر دلت کنبہ کی وحشیانہ پٹائی کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ خبر کے مطابق گجرات کے آنند ضلع کے میں اعلی ذات کے تقریبا 15 افراد نے ایک 45 سالہ دلت خاتون اور اس کے بیٹے کو پہلے ننگا کیا اور پھر چھڑی سے بری طرح پٹائی کی۔ معاملہ گزشتہ 12 اگست کا بتایا جا رہا ہے۔

اس سلسلہ میں گزشتہ روز ایف آئی آر درج کرادی گئی ہے۔ ایف آئی آر کے مطابق سجترا تعلقہ کے کاسور گاوں میں یہ واقعہ پیش آیا ہے۔ راجپوت برادری کے تقریبا 15 افراد نے ایک 22 سالہ بیٹا اور اس کی 45 سالہ ماں کی زبردست پٹائی کی ۔ سجترا پولیس اسٹیشن میں درج ایف آئی آر میں متاثرین کا کہنا ہے کہ کاسور گاوں کے 15 افراد اس کے گھر میں زبردستی گھس گئے اور اس کی ذات کو لے کر برا بھلا کہا۔

گجرات میں پھر اونا واقعہ دوہرانے کی کوشش ، مردہ گائے کی کھال اتارنے پر دلت کنبہ کی جم کر پٹائی

Picture for Representation. (Photo: Reuters)

میڈیا رپورٹس کے مطابق ماں اور بیٹا مردہ جانوروں کے لاشوں کی کھالیں اتارنے کا کام کرتے ہیں۔ پولیس نے تعزیرات ہند کی دفعہ 323، 506 (2) اور ایس سی ایس ٹی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کر لیا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ ایک سال پہلے ہی اونا میں مری ہوئی گائے کی کھال نکالنے پر چار دلتوں کی وحشیانہ طورپر پٹائی کی گئی تھی۔ مخالفت میں دلتوں نے گجرات کے سرکاری دفاتر کے سامنے مری گائیں ڈال دی تھیں۔ گجرات سمیت ملک بھر میں اس واقعہ کے خلاف مظاہرہ کیا گیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز