گجرات اسمبلی انتخابات : بی جے پی کی مشکلات ہنوز برقرار ، اب ساس بہو کی سیاست میں الجھی پارٹی

گجرات اسمبلی انتخابات کی تاریخ جوں جوں قریب آتی جارہی ہے ، بی جے پی کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوتا جارہا ہے ۔

Nov 25, 2017 06:13 PM IST | Updated on: Nov 25, 2017 06:13 PM IST

احمد آباد : گجرات اسمبلی انتخابات کی تاریخ جوں جوں قریب آتی جارہی ہے ، بی جے پی کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوتا جارہا ہے ۔ باہر عوام کے کئی طبقوں کی ناراضگی جھیل رہی پارٹی کے اندرونی حالات بھی بہت اچھے نہیں ہیں اور ٹکٹ کی تقسیم کو لے کر مچا گھمسان تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے۔ ٹکٹو ں کی تقسیم سے ناراض جہاں کئی لیڈران پہلے ہی استعفی دے چکے ہیں وہیں اب ٹکٹ کو لے کر بی جے پی ساس بہو کے تنازع میں بھی پھنسی ہوئی نظر آرہی ہے۔

بی جے پی کی جانب سے پنچ محل کی کولول بیٹھک سیٹ سے پنچ محل کے ممبر پارلیمنٹ پربھات سنگھ چوہان کی بہو سمن چوہان کو ٹکٹ ملا تھا ۔ وہ پربھات سنگھ کی پہلی بیوی کے بیٹے کی اہلیہ ہیں۔ مگر سمن کو ٹکٹ ملنے پر پربھات سنگھ کی تیسری بیوی رندھیشوری دیوی نے جمعہ کو فیس بک پر اپنی ناراضگی کا اظہار کیا ۔ تاہم بعد میں انہوں نے اپنی پوسٹ ڈیلیٹ کردی تھی ۔

گجرات اسمبلی انتخابات : بی جے پی کی مشکلات ہنوز برقرار ، اب ساس بہو کی سیاست میں الجھی پارٹی

اب اس معاملہ پر پربھات سنگھ نے بی جے پی کے صدر امت شاہ کو ایک خط لکھا ہے ۔ انہوں نے لکھا ہے کہ میری بہو کو ٹکٹ نہ دیا جائے ، یہاں سے پارٹی کا امیدوار تبدیل کیا جائے ۔ انہوں نے اپنے خط میں مزید لکھا ہے کہ اس کا بیٹا (پروین ) ایک بٹلیگرہے اور وہ شراب کی تجارت بھی کرتا ہے۔ یہی نہیں سمن اور پروین جیل بھی جاچکے ہیں۔

انہوں نے لکھا کہ کالول اور گودھر اسمبلی حلقہ کی سیٹ اس حلات میں جیتا نہیں پاوں گا ۔ اگر بی جے پی ہارتی ہے تو میری ذمہ داری نہیں ہوگی ، میرے بی جے پی میں آنے کے بعد نگر نگم سے لے کر لوک سبھا تک سبھی پر بی جے پی کامیاب ہوئی ہے ، پارٹی میں سینئر ہونے کی باوجود مجھے تنظیم یا کسی اور پلیٹ فارم پر جگہ نہیں دی گئی ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز