گجرات اسمبلی انتخابات : بی جے پی ممبر پارلیمنٹ کی وارننگ ، بیٹے کو ٹکٹ نہیں ملا تو چھوڑ دوں گا پارٹی

Nov 19, 2017 04:08 PM IST | Updated on: Nov 19, 2017 04:08 PM IST

گاندھی نگر: گجرات میں انتخابی گہما گہمی کے درمیان برسر اقتداربی جے پی کی مشکلات میں اضافہ کرتے ہوئے پارٹی کے لوک سبھا ممبر پارلیمنٹ لیلا دھر واگھیلا نے آج خبردار کیا کہ اگر ان کے بیٹے کو ٹکٹ نہیں دیا گیا تو وہ پارٹی چھوڑ دیں گے۔واضح رہے کہ اب تک کل 182 میں سے 106 نشستوں کے لئے امیدوار کا اعلان کر چکی بی جے پی کے سینئر ممبر اسمبلی، پارلیمانی سیکرٹری اور دلت لیڈر جیٹھا سولنکی نے انہیں ٹکٹ نہیں ملنے کے اندیشے پر ہی کل پارٹی اور ایم ایل اے کے عہدے سے استعفی دے دیا تھا۔

مسٹر واگھیلا گزشتہ لوک سبھا انتخابات میں ممبر اسمبلی رہتے ہوئے گجرات کے پاٹن سیٹ سے بی جے پی کے امیدواروں تھے۔لوک سبھا میں فتحیابی کے بعد انہوں نے ڈيسا اسمبلی سیٹ چھوڑ دی تھی لیکن اس سیٹ پر ستمبر 2014 میں ہوئے ضمنی انتخابات میںبی جے پی امیدوار لیباجي ٹھاكور کی کانگریس کے گوا رباري کے ہاتھوں 10 ہزار سے زیادہ ووٹوں سے شکست ہو گئی تھی۔

گجرات اسمبلی انتخابات : بی جے پی ممبر پارلیمنٹ کی وارننگ ، بیٹے کو ٹکٹ نہیں ملا تو چھوڑ دوں گا پارٹی

مسٹر واگھیلا نے آج یہاں صحافیوں کو بتایا کہ انہوں نے ڈیسا سے اپنے بیٹے دلیپ واگھیلا کے لئے ٹکٹ کا مطالبہ کیاہے۔ انہوں نے برسوں سے پارٹی کی خدمت کی ہے اور اپنے بیٹے کو بھی اس کی خدمت میں لگانا چاہتے ہیں۔ اگر پارٹی انکی خدمات کی قدر نہیں کرتی اور ان کے بیٹے کو ٹکٹ نہیں دیتی ہے تو وہ پارٹی سے استعفی دے دیں گے۔ادھر ذرائع نے بتایا کہ مسٹر واگھیلا نے اپنے بیٹے کے لئے کانکریج، دییودر یا ڈیسا میں سے کسی ایک سیٹ کا مطالبہ کیا تھا۔ دو سیٹوں پرپہلے ہی دوسرے لوگوں کو ٹکٹ دیا جا چکا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز