گجرات اسمبلی انتخابات : امیدواروں کے اعلان میں بی جے پی اور کانگریس کی پہلے آپ پہلے آ پ کی حکمت عملی

گجرات انتخابات کے لئے نامزدگی کا عمل شروع ہونے کے باوجود حکمراں بی جے پی اور اہم اپوزیشن جماعت کانگریس مبینہ طورپر ایک سوچی سمجھی حکمت عملی کے تحت اپنے امیدواروں کا اعلان کرنے کے معاملہ میں ’پہلے آپ پہلے آپ‘ کی پالیسی پر چلتی نظر آرہی ہیں۔

Nov 17, 2017 12:46 PM IST | Updated on: Nov 17, 2017 12:46 PM IST

گاندھی نگر: گجرات انتخابات کے لئے نامزدگی کا عمل شروع ہونے کے باوجود حکمراں بی جے پی اور اہم اپوزیشن جماعت کانگریس مبینہ طورپر ایک سوچی سمجھی حکمت عملی کے تحت اپنے امیدواروں کا اعلان کرنے کے معاملہ میں ’پہلے آپ پہلے آپ‘ کی پالیسی پر چلتی نظر آرہی ہیں۔گجرات میں 9اور 14دسمبر کو دو مرحلہ میں انتخابات ہونے ہیں۔ پہلے مرحلہ کے لئے کاغذات نامزدکی داخل کرنے کے عمل کی 14نومبر سے شروعات ہوچکی ہے پر بی جے پی یا کانگریس نے اب تک ایک بھی امیدوار کا اعلان نہیں کیا ہے۔ پہلے تین دن میں محض 26نامزدگیاں داخل ہوئی ہیں۔ ان میں بی جے پی کا ایک مبینہ طورپر ڈمی امیدوار ہے لیکن کانگریس کی طرف سے ڈمی تک نہیں اتارا گیا ہے۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ کانگریس نے گزشتہ برس دسمبر میں ہی امیدوار کا اعلان کرکے انہیں تیاری کے لئے ایک برس کا وقت دینے کی بات کہی تھی پر یہ کام اب تک نہیں ہوسکا ہے۔ پارٹی کے ریاستی صدر بھرت سنگھ سولنکی نے کچھ وقت پہلے کہا تھا کہ 16نومبرکو 70امیدواروں کی پہلی فہرست آئے گی پر ایسا نہیں ہوا۔ آج دہلی میں کانگریس کی مرکزی انتخابی کمیٹی کی میٹنگ ہورہی ہے پر امیدواروں کے اعلان کے تعلق سے کوئی وضاحت نہیں ہے۔دوسری طرف 22برسوں سے ریاست میں حکمراں بی جے پی بھی اس معاملہ میں کافی پھونک پھونک کر قدم رکھ رہی ہے اوراپنی فہرست جاری کرنے سے پہلے کانگریس کی فہرست آنے کا انتظار کررہی ہے تاکہ ضرورت کے مطابق کچھ سیٹوں پر آخری وقت میں ضروری تبدیلی کی جاسکے۔ پارٹی کے سینئر لیڈر اور نائب وزیراعلی نتن پٹیل نے تو صاف طورپر کہا ہے کہ پارٹی کانگریس کے امیدواروں کے اعلان کا انتظار کررہی ہے۔

گجرات اسمبلی انتخابات : امیدواروں کے اعلان میں بی جے پی اور کانگریس کی پہلے آپ پہلے آ پ کی حکمت عملی

بی جے پی کے ایک دیگر لیڈر نے یو این آئی سے کہاکہ کچھ طے شدہ سیٹوں جیسے وزیراعلی وجے روپانی کے لئے راجکوٹ مغرب وغیرہ کی ایک فہرست غالباََ جلد ہی جاری ہوجائے پر دیگرسیٹوں کے لئے کانگریس کی فہرست کا انتظار کیا جائے گا۔ پارٹی جیت کے تعلق سے پرامید ہے پر صدر امت شاہ کی طرف سے طے 150سیٹوں پر جیت کے ہدف کے سبب خصوصی احتیاط برتی جارہی ہے۔ مسٹر شاہ فہرست تیار کرنے کے لئے کل اور آج بھی گاندھی نگر میں میٹنگیں کررہے ہیں۔کانگریس ،جو اس بار پاٹیدار، دلت ، او بی سی اور قبائلیوں سے اتحاد پر گجرات میں کرشمہ ہونے کی امید کررہی ہے، بھی کوئی خطرہ نہیں اٹھانا چاہتی ہے۔ وہ بھی بی جے پی کی فہرست دیکھ کر اس حساب سے امیدوار وں میں تبدیلی کرنے کی حکمت عملی پر کام کررہی ہے۔

سیاسی تجزیہ کاروں کا ماننا ہے کہ کانگریس بھی زیادہ تاخیر ہونے پر اپنے کچھ بڑے لیڈروں کی پہلے سے طے شدہ سیٹوں کی فہرست جاری کرے گی اور پھر بی جے پی کی فہرست کا انتظار کرے گی۔ انتظار کا یہ کھیل پہلے مرحلہ کے لئے کاغذات نامزدگی داخل کرنے کی آخری تاریخ 21نومبر تک پہنچ جائے تو کو ئی حیرت کی بات نہیں ہوگی۔ریاست میں مجموعی طورپر 182اسمبلی سیٹوں میں سے پہلے مرحلہ میں سوراشٹر اور جنوبی گجرات کے 19 اضلاع کی 89سیٹوں پر اور دوسرے مرحلہ میں 14اضلاع کی 93سیٹوں پر پولنگ ہوگی۔ دوسرے مرحلہ کے لئے کاغذات نامزدگی کا عمل 20سے 27نومبر تک چلے گا۔ ووٹوں کی گنتی 18دسمبر کو ہوگی۔وزیراعظم نریندر مودی اور بی جے پی کے صدر امت شاہ ، دونوں کی آبائی ریاست میں ہونے والے اس الیکشن پر ملک اور دنیا کی نظریں ہیں۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز