Live Results Assembly Elections 2018

گجرات میں کانگریس کو ملا پاٹیداروں کا ساتھ، جگہ جگہ کر رہے راہل گاندھی کا استقبال

احمد آباد۔ کانگریس اور بی جے پی نے گجرات اسمبلی انتخابات میں جیت حاصل کرنے کے لئے تیاریاں شروع کردی ہیں۔

Sep 26, 2017 09:17 PM IST | Updated on: Sep 26, 2017 09:17 PM IST

 احمد آباد۔ کانگریس اور بی جے پی نے  گجرات اسمبلی انتخابات میں جیت حاصل کرنے کے لئے تیاریاں شروع کردی ہیں۔ وزیراعظم نریندر مودی کے گڑھ گجرات میں  کانگریس کے سامنے کئی  چیلنجز ہیں ۔ جبکہ بی جے پی کو توقع ہے کہ وہ گجرات میں کامیابی کا سلسلہ جاری رکھے گی۔  کانگریس گجرات میں  میں گٹ بازی کا شکار ہے، جسے دور کرنے اور کارکنان میں نیا جوش بھرنے کے لئے کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی تین روزہ گجرات کے دورے پر ہیں۔ اس دوران  روڈ شو کرکے راہل گاندھی لگاتار سرکار اور نریندر مودی کو  آڑے ہاتھوں لے رہے ہیں۔ تاہم اب راہل گاندھی کو پاٹیداروں کا ساتھ مل گیا ہے اور انقلاب زندہ باد کےنعروں کی ٹوپی پہن کر تمام پٹیل برادری کے لوگ جگہ جگہ راہل گاندھی کا استقبال کرتے نظر آ رہے ہیں۔

کانگریس گزشتہ دو دہائیوں سے گجرات ریاست میں اقتدار کا بنواس جھیل رہی ہے۔ راہل گاندھی سوراشٹر کے ذریعے اقتدار کی واپسی کی راہ بنانے اترے ہیں ۔ راہل پاٹيدار سماج کو دوبارہ سے اپنے ساتھ شامل کرنے کا منصوبہ بنا رہے ہیں ۔ وہیں  سوراشٹر  پہنچنے پاٹیدار آندولن کی قیادت کر رہے ہاردک پٹیل نے ان کا  ٹویٹ  کرکے استقبال کیا ہے، جس سے صاف دکھائی دے رہا ہے کہ اب پٹیل برادری کے لوگ  کانگریس کی حمایت میں کھڑے ہو گئے ہیں، جس کا پورا پورا فائدہ کانگریس پارٹی اٹھانے والی ہے۔ اب راہل جہاں جہاں جا رہے ہیں پاٹیدار جم کر ان کا  استقبال کر رہے ہیں، جس سے کہیں نہ کہیں بی جے پی میں ڈر کا ماحول دیکھنے کو مل رہا ہے۔

گجرات میں کانگریس کو ملا پاٹیداروں کا ساتھ، جگہ جگہ کر رہے راہل گاندھی کا استقبال

دراصل  گجرات کی سیاست میں سوراشٹر کا  ہمیشہ  سےاہم رول رہا ہے۔ ریاست کی 182 اسمبلی سیٹوں میں اس خطے سے 52 سیٹیں آتی ہیں ۔ سوراشٹر میں بڑی آبادی پاٹيدار معاشرے کی ہے اور اس میں بھی خاص طور پر لیووا پٹیل بڑی تعداد میں موجود ہیں۔  اس علاقے میں کم از کم 32 سے 38 اسمبلی سیٹوں پرپٹیل کمیونٹی کسی کی بھی پارٹی کو انتخابات میں شکست دینےاورجتانےکا فیصلہ کرتی ہے۔ ایسے میں اگر یہ پاٹیدار کانگریس کو اسمبلی الیکشن میں ووٹ دیتے ہیں تو کانگریس کی جیت یقینی ہے ۔ 15 اکتوبر تک راہل گاندھی چار مراحل میں گجرات کے چاروں خطوں کا  دورہ کریں گے۔  کانگریس کی کوشش یہی ہے کہ راہل کے دوروں کے دوران دلت لیڈر جگنیش میوانی اور الیش ٹھاکر سے بھی ہاردک کی طرح کانگریس کی حمایت کرنے کا اعلان کرایا جا سکے اوراگر ان کا ساتھ ملتا ہے تو کانگریس گجرات میں بہت زیادہ مضبوط ہو جائیگی۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز