گجرات اسمبلی الیکشن کے پہلے مرحلے میں 65 فیصد سے زیادہ پولنگ کا اندازہ

Dec 09, 2017 08:12 PM IST | Updated on: Dec 09, 2017 08:12 PM IST

گاندھی نگر۔ گجرات اسمبلی کے لئے پہلے مرحلے میں جنوبی اور سوراشٹر ۔کچھ علاقے کے انیس اضلاع کی 89سیٹوں پر آج پولنگ کا وقت ختم ہونے کے بعد بھی کئی بوتھ پر ووٹروں کی قطاریں لگی تھیں اور ضابطہ کے مطابق ان کے ووٹ ڈالنے کے بعد ہی ای وی ایم مشینوں کو سیل کیا جائے گا۔ ابتدائی اندازوں کے مطابق 65فیصد سے زیادہ پولنگ کا اندازہ ہے۔

کانگریس کی طرف سے پوربندر میں تین بوتھوں پر ای وی ایم کے بلیو ٹوتھ سے منسلک ہونے کی شکایت پر جانچ کے بعد پایا گیا کہ ایک امیدوار کے پولنگ ایجنٹ کے پاس موجود فون کے بلیو ٹوتھ کھلا رہنے کی وجہ سے یہ گڑبڑی ہوئی۔ آمود حلقہ میں ایک ووٹر نے اس کا ووٹ دوسرے امیدوار کے حق میں جانے کی شکایت کی ۔

گجرات اسمبلی الیکشن کے پہلے مرحلے میں 65 فیصد سے زیادہ پولنگ کا اندازہ

کانگریس نے الیکشن کمیشن سے کئی شکایتیں کی ہیں۔ ان میں وزیر اعلی وجے روپانی کو جو خود بھی امیدوار ہیں کے ووٹ ڈالنے کے دوران احمد آباد میں پریس کانفرنس کرکے مثالی ضابطہ اخلاق کی خلا ف ورزی کرنے کی شکایت کی گئی۔ چیف الیکٹورل افسر نے کہا کہ تمام شکایتوں کی جانچ کی جا رہی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز