گجرات فسادات کے سب سے بڑے قتل عام کیس کے کلیدی ملزم بابو بجرنگی کو عارضی ضمانت

May 22, 2017 09:52 PM IST | Updated on: May 22, 2017 09:52 PM IST

احمد آباد۔  گجرات ہائی کورٹ نے ریاست میں 2002 میں ہوئے فسادات کے سب سے بڑے قتل عام نرودا پاٹیا قتل عام، جس میں 97 لوگوں کو بھیڑ نے مار ڈالا تھا، کے 31 قصورواروں میں سے کلیدی ملزم بابو پٹیل عرف بابو بجرنگی کو آج سات دن کی عارضی ضمانت دے دی۔ اس معاملے میں ایک خصوصی عدالت نے 2012 میں بجرنگی اور ریاست کی سابق وزیر مایا کوڈنانی سمیت 31 لوگوں کو مجرم قرار دیتے ہوئے سب کو عمر قید کی سزا سنائی تھی۔ اس کے خلاف اپیل پر سماعت کر رہی ہائی کورٹ کی جسٹس هرشا دیوانی اور جسٹس اے ایس سپیهيا کی بینچ نے بجرنگی کی بیمار بیوی کے علاج اور آپریشن کے لئے پانچ ہزار روپے کے ذاتی مچلکے پر ایک ہفتے کی عارضی ضمانت آج منظور کرلی۔

بجرنگی نے ایک ماہ کی عارضی ضمانت کی مانگ کی تھی۔ اس معاملے میں ہائی کورٹ نے جولائی 2014 میں ہی مایاکوڈنانی کو صحت کی وجوہات اور اپیل پر سماعت میں تاخیر کے سبب ضمانت دے دی تھی۔

گجرات فسادات کے سب سے بڑے قتل عام کیس کے کلیدی ملزم بابو بجرنگی کو عارضی ضمانت

بابو بجرنگی: فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز