حج فلائٹس شروع ، مگر اب تک نئے سی ای او نے نہیں سنبھالا عہدہ ،دھمکی کی وجہ سے خوف کے بادل چھائے

امسال جموں وکشمیر میں امرناتھ یاتریوں پر حملے کے پیش نظر حج بیت اللہ جانے والے عازمین کوروکنے اور حملے کی دھمکی سے حالات نے سنگین صورتحال اختیار کرلی

Jul 27, 2017 04:44 PM IST | Updated on: Jul 27, 2017 04:44 PM IST

ممبئی : امسال جموں وکشمیر میں امرناتھ یاتریوں پر حملے کے پیش نظر حج بیت اللہ جانے والے عازمین کوروکنے اور حملے کی دھمکی سے حالات نے سنگین صورتحال اختیار کرلی، اس کے باوجودحج کمیٹی آف انڈیا اپنے چیف ایگزیکٹیو افسر(سی ای او) سے محروم ہے اور کارگزار سی ای او کام کاج دیکھ رہے ہیں۔

وا ضح رہے کہ ممبئی یونیورسٹی کے رجسٹرار مقصوداحمدخان کومرکزی حکومت نے حج کمیٹی آف انڈیا کاچیف ایگزیکٹوز افسر مقرر کیاتھا، لیکن یونیورسٹی نے انہیں اب تک راحت نہیں دی ہے کیونکہ امسال امتحانی پرچوں کی جانچ میں تاخیر ہوئی ہے اور نتائج ظاہرنہیں کئے ہیں حالانکہ نئی دہلی، لکھنؤ اور گوہاٹی سے حج 2017 کے لئےسعودی عرب کے لئے عازمین کی پروازوں کاسلسلہ. شرورع ہوچکا ہے اور متعددیروانہ ہوچکی ہیں۔جبکہ چند انتہاپسندبھگواتنظیموں نے دھمکی آمیز بیانات دینا شروع کردیئے، ایسے وقت میں ایک اہم عہدیدار کا ہونا انتہائی ضروری ہے۔

حج فلائٹس شروع ، مگر اب تک نئے سی ای او نے نہیں سنبھالا عہدہ ،دھمکی کی وجہ سے خوف کے بادل چھائے

Picture : Twitter

حج کمیٹی کے ذرائع کے مطابق امسال ممبئی یونیورسٹی میں بحران کے سبب اب تک نتائج کا اعلان نہیں جاسکا ہے اور یہی وجہ ہے کہ یونیورسٹی کے رجسٹرار کے عہدے پر فائز ہونے کی وجہ سے وائس چانسلر دیشمکھ نے نئے سی ای او مقصود احمد خان کو رخصت نہیں کیا ہے۔ایسا پہلی بار ہوا ہے کہ مرکزی حکومت نے ریاستی سطح کے افسر کو سی ای او کے عہدے پر فائز کیا ہے۔مقصود احمد سرکاری سڈنہم کالج کے ڈائریکٹر تھے اور انہیں چار سال قبل یونیورسٹی کے رجسٹرار مقرر کیا گیا تھا۔

دریں اثناء دہلی، لکھنو اور گوہاٹی سے عازمین حج کی پروازیں مدینہ منورہ روانہ ہوچکی ہیں۔امسال ممبئی، دہلی، کولکتہ اور چنئی سمیت 21 مقامات سے عازمین حج بیت اللہ کے لئے روانہ ہوں گے اور یہ مرحلہ اگست کے پہلے ہفتے میں شروع ہوجائے گا۔دوسرے مرحلے میں بنگلور، بھوپال اور رانچی سے 8اگست کو فلائٹ روانہ ہوں گی، ناگپوت سے 10 اگست کو تیسرا مرحلہ شروع ہوگا اور ممبئی سے 20 اگست کو پہلی حج پرواز روانہ ہوگی۔اسی طرح آخری گلائٹ 27 اگست کو گیا سے جائے گی اور ستمبر کے پہلے ہفتے میں حج منعقد ہوگا ۔جس میں ہرسال دنیا بھر سے لاکھوں افراد شریک ہوتے ہیں اور ہندوستان ۔سے تقريباً ڈیڑھ لاکھ فرزندان توحید حج کا فریضہ ادا کرتے ہیں۔

Loading...

آج مہاراشٹر اسمبلی میں بھی عازمین حج کے تحفظ کے مسئلہ پر تشویش کاا ظہار کیاگیااور حکت نے ایوان میں عازمین حج کومکمل تحفظ دینے کایقین دلایاہے۔یہ معاملہ کانگریس کے ایم ایل اے آصف شیخ نے اٹھایا اور وزیر مملکت برائے داخلہ یحفظ کایقین دلایا ہے۔حملوں کی دھمکیوں کے سبب خوف کے بادل چھائے ہوئے ہیں ۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز