ممبئی سے اللہ کے مہمانوں کے پہلے قافلے کی حج بیت اللہ کے لئے روانگی

Aug 19, 2017 08:53 PM IST | Updated on: Aug 19, 2017 08:53 PM IST

ممبئی۔ ممبئی سے اللہ کے مہمانوں کے پہلے قافلے کی حج بیت اللہ کے لیے روانگی کے موقع پر مرکزی وزیر برائے اقلیتی امور اورپارلیمانی امورو حج مختار عباس نقوی نے عازمین حج سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ دوران حج ملک میں امن وآشتی کے لیے دعاء کریں تاکہ ملک میں قومی ہم آہنگی اور بھائی چارگی برقراررہے اور وطن عزیز خوشحالی اور ترقی کی جانب گامزن ہوسکے ۔انہوں نے کہاکہ حج 2017 سے متعلق عمل مرکزی حکومت نے وقت سے پہلے ہی پوراکر لیا تھا، جس سے حج کاکام کاج منظم طورپرکیا جا رہا ہے۔

160160. ممبئی سے 5600 عازمین حج جدہ روانہ ہورہے ہیں۔ نقوی نے کہا کہ فی الحال حج بہت کامیاب رہا ہے، مرکزی حکومت کی جانب سے حاجیوں کی سہولتوں کو ترجیح دیتے ہوئے، وقت کی تیاری بہت جلد ہی مکمل ہوگئی۔ نقوی نے کہا کہ نئی حج پالیسی ۔ 2018 بہت جلد جاری کر دی جائے گی اور اگلے سال سے حج اس نئی حج پالیسی کے مطابق کیا جائے گا۔ نئی حج پالیسی کا مقصد حج کے مکمل عمل کو سادہ اور شفاف بنانا ہے۔ نئی پالیسی میں حاجیوں کے لئے مختلف سہولیات کا خیال رکھا جائے گا۔ حج کے لئے بحری راستہ کھولنے کی تجویز بھی نئی حج پالیسی میں شامل ہے اور بحری جہاز سے سفر دوتین دن میں مکمل کرلیاجائے گا جبکہ 1995میں 10-12 روز لگتے تھے ،فی الحال چار ۔پانچ ہزار افراد بحری جہاز سے سفر کرسکیں گے۔

ممبئی سے اللہ کے مہمانوں کے پہلے قافلے کی حج بیت اللہ کے لئے روانگی

خانہ کعبہ کا دلکش منظر: فائل فوٹو

واضح رہے کہ پہلے اور دوسرا مرحلے کے دوران تقریبا 85 ہزارعازمین پہلے ہی پہنچ چکے ہیں۔ پہلے مرحلے میں دہلی، گیا، گوا، کولکتہ، لکھنؤ، منگلور، سرینگر، وارانسی سے عازمین حج سعودی عرب کے لئے روانہ ہوئے اور دوسرے مرحلے میں عازمین حج بنگلور، بھوپال، رانچی، ناگپور، ممبئی، جے پور، حیدرآباد، کوچی، اورنگ آباد، احمد آباد، اندور سے جا رہے ہیں۔ 26 اگست کو دوسرا مرحلہ ختم ہوجائے گا۔ مرکزی وزیرمختارعباس نقوی آج یہاں ممبئی کے شیواجی مہاراج بین الاقوامی ہوائے اڈّہ پر ممبئی سے روانہ ہونے والے عازمین حج کے پہلے قافلے کو الوداع کررہے تھے ،اس موقع مہاراشٹر حج کمیٹی کے چیئرمین اور حج کمیٹی آف انڈیا کے ممبر حاجی ابراھیم شیخ بھائی جان نے وزیرموصوف کی موجودگی میں مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا کہ حکومت حاجیوں کے لیے ایک بار ہی 25000کروڑروپے کی حج فنڈمہیاکرائے ۔دراصل سپریم کورٹ کے ایک فیصلہ کے بعد 2022 تک سبسڈی مرحلہ وارکم کرتے ہوئے ختم کردی جائے گی۔اس لئے مذکورہ فنڈ سے ہوائی جہاز خریدے جائیں جن کا استعمال حج سیزن میں کیا جائے اور پھر انہیں لیز پر دے دیاجائے تاکہ اس سے زائد اخراجات پورے کئے جائیں۔

انہوں نے حج سبسڈی کے سلسلے میں وزیراعظم نریندرمودی ،متعلقہ وزارت اور وزیر کو مکتوب روانہ کیا ہے۔ پہلے قافلے کی روانگی سے قبل ایئرپورٹ کے کارپارکنگ لانج میں مہاراشٹراسٹیٹ حج کمیٹی کے زیراہتمام ایک الوداعی جلسہ سے ان دعونوں کے علاوہ دیگر ریاستی وزراء اور معززین نے خطاب کیا ۔ جلسہ میں عازمین حج کے ہمراہ ان کے قریبی رشتہ دار جان پہچان والے موجودرہے جوکہ کافی جذباتی تھے اور شرکاء کی جانب سے نعرہ تکبیر لگاتے جارہے تھے جبکہ امسال ممبئی سے 10ہزار 87عازمین حج روانہ ہوں گے ،مذکورہ پرواز کے ذریعہ 300عازمین حج روانہ ہوئے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز