ہیلی کاپٹر حادثہ: مہاراشٹر کے وزیر اعلی کی سب سے پہلے مسلم نوجوان نے مدد کی

May 27, 2017 12:02 PM IST | Updated on: May 27, 2017 12:03 PM IST

ممبئی۔ مہاراشٹر کے وزیر اعلی دیویندر فرنویس کا ہیلی کاپٹر گزشتہ دنوں ریاست کے لاتور نامی مقام پر حادثہ کا شکار ہوگیا تھا اس وقت اس علاقے کے ایک کباڈی مسلم نوجوان کو یہ شرف حاصل ہوا کہ وہ وزیر اعلی کی مدد کیلئے سب سے پہلے ہیلی کاپٹر کے پاس پہنچے اور انہوں نے ہیلی کاپٹر کا دروازہ کھول کر وزیر اعلی اور ان کے ہمراہ سفر کر رہے دیگر پانچ افراد کو بحفاظت باہر نکالا۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق جوں ہی وزیر اعلی کا ہیلی کاپٹر حادثے کا شکار ہوا اس وقت جائے حادثہ پر موجود عرفان شیخ نے چلانا شروع کر دیا اور کہا کہ ’’ ہمارا راجہ ہیلی کاپٹر میں پھنسا ہوا ہے۔‘‘ عرفان شیخ ہیلی کاپٹر کے قریب گیا اور اس نے اس کا دروازہ کھولنے کی کوشش کی لیکن بعد میں دیوندر فڑنویس نے زور لگایا اور پھر ہیلی کاپٹر کا دروازہ کھل گیا۔  دروازہ کھولنے کے بعد عرفان نے وزیر اعلی کا ہاتھ تھاما اور انہیں ہیلی کاپٹر سے اتارا۔

مراٹھی روزنامہ کے نامہ نگار گوند انگلے سے بات چیت کرتے ہوئے عرفان شیخ نے کہا کہ وزیر اعلی نے نیچے اترنے کے بعد کہا کہ وہ خیریت سے ہیں نیز انہوں نے ہیلی کاپٹر میں سوار دیگر افراد کو بھی اتارنے کی عرفان سے درخواست کی جس کے بعد دیگر افراد کو بھی اتارا گیا۔ یو این آئی کی اردو سروس سے گفتگو کرتے ہوئے عرفان نے کہا کہ ہیلی کاپٹر کا دروازہ زمین میں دھنسنے کی وجہ سے جام ہو گیا تھا اسے کھلنا مشکل ہو رہا تھا لیکن ایک جانب جہاں وہ باہر سے اپنی پوری طاقت لگا کر اسے کھولنے کی کوشش کر رہے تھے تو دوسری جانب وزیر اعلی نے بھی اندر سے زور لگایا جس کی وجہ سے چند منٹوں میں دروازہ کھل گیا۔ ممبئی میں وزیر اعلی دفتر نے عرفان شیخ کی جانب سے سب سے پہلے مدد کے لئے آنے کی تصدیق کی ہے لیکن یہ کہنے سے انکار کیا ہے کہ وزیر اعلی اس کو اعزاز بخشیں گے یا اس کی پذیرائی کریں گے۔

ہیلی کاپٹر حادثہ: مہاراشٹر کے وزیر اعلی کی سب سے پہلے مسلم نوجوان نے مدد کی

تصویر: این ڈی ٹی وی، ڈاٹ کام

عرفان نے مزید بتایا کہ جوں ہی ہیلی کاپٹر کا حادثہ ہوا اس کی طرح دیگر افراد بھی ہیلی کاپٹر کے قریب پہنچنے کی کوشش کر رہے تھے لیکن انہیں خوف تھا کہ کہیں دھماکہ نہ ہو جائے نیز اپنی جان کی پرواہ نہ کرتے ہوئے وہ سب سے پہلے ہیلی کاپٹر کے پاس پہنچے اور راحتی کاموں میں انہوں نے حصہ لیا۔ واضح رہے کہ اس حادثہ کے بعد وزیر اعلی نے اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ مہاراشٹر کے بارہ کروڑ عوام اور جے بھوانی کے آشیرواد سے محفوظ ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز