این آئی اے کو بڑا جھٹکا: انٹرپول نے ذاکر نائک کے خلاف نہیں جاری کیا ریڈ کارنر نوٹس

انٹرپول نے ذاکر نایک کے خلاف ریڈ کارنر نوٹس جاری کرنے کی این آئی اے کی مانگ کو تسلیم نہیں کیا ہے۔

Dec 17, 2017 09:23 AM IST | Updated on: Dec 17, 2017 09:23 AM IST

نئی دہلی۔ اپنی تقریروں سے دہشت گردوں کو متاثر کرنے کے ملزم معروف اسلامی اسکالر ذاکر نائک کے معاملے میں قومی جانچ ایجنسی (این آئی اے) کو بڑا جھٹکا لگا ہے۔ انٹرپول نے ذاکر نایک کے خلاف ریڈ کارنر نوٹس جاری کرنے کی این آئی اے کی مانگ کو تسلیم نہیں کیا ہے۔ انٹرپول نے بتایا کہ جب ریڈ کارنر نوٹس کے لئے درخواست دی گئی، تب تک اس معاملے میں چارج شیٹ داخل نہیں کی گئی تھی۔

این آئی اے اب ایک بار پھر چارج شیٹ داخل کرے گی۔ اس کیس میں ممبئی کورٹ میں چارج شیٹ داخل کی جا چکی ہے۔ وہیں، انٹرپول کے عرضی خارج کرنے پر ذاکر نائک نے خوشی کا اظہار کیا ہے۔  نائک نے کہا، "میں انٹرپول کے فیصلے سے خوش ہوں۔ مجھے امید ہے کہ بھارتی تحقیقاتی ایجنسیاں بھی مجھ پر تمام غلط اور جھوٹے معاملات کو مسترد کر دیں گی۔'

این آئی اے کو بڑا جھٹکا: انٹرپول نے ذاکر نائک کے خلاف نہیں جاری کیا ریڈ کارنر نوٹس

ڈاکٹر ذاکر نائیک: فائل فوٹو

ذاکر نائک کے ترجمان نے دعوی کیا کہ انٹرپول نے اس بات کو تسلیم کیا ہے کہ اس معاملے میں سیاسی اور مذہبی تعصب اختیار کیا گیا ہے۔ ترجمان کے مطابق، 'انٹرپول نے ڈاکٹر نائک کے خلاف ریڈ کارنر نوٹس کو منسوخ کر دیا ہے اور دنیا بھر میں موجود اپنے دفتروں کو ان کا ڈیٹا ہٹانے کو کہا ہے۔ انٹرپول نے سیاسی اور مذہبی تعصب کو بھی ایک وجہ بتائی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز