ٹیم انڈیا کیلئے کوچ کی تلاش : سوربھ گنگولی نے کہا : وراٹ کوہلی سے بات چیت کے بعد ہی لیا جائے گا فیصلہ

Jul 10, 2017 07:21 PM IST | Updated on: Jul 10, 2017 07:39 PM IST

ممبئی: ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے نئے قومی کوچ کا فیصلہ فی الحال کچھ دن کیلئے ٹل گیا ہے اور کوچ کو منتخب کرنے کے لئے مقرر تین رکنی کرکٹ ایڈوائزری کمیٹی اس معاملے میں کچھ اور لوگوں خاص طور پر کپتان وراٹ کوہلی سے بات چیت کرے گی۔ کمیٹی کے رکن اور سابق ہندوستانی کپتان سوربھ گانگولی نے پیر کو دن بھر جاری رہی گہما گہمی کے بعد شام کو پریس کانفرنس میں یہ اعلان کیا۔گنگولی نے کہاکہ ہمیں اگلے کوچ کا اعلان کرنے کے لیے کچھ دن لگیں گے۔ہمیں کچھ اور لوگوں سے بات کرنی ہے، خاص طور پر وراٹ کوہلی سے۔

ہندستانی کوچ کے لیے ٹیم انڈیا کے سابق ڈائریکٹر روی شاستری کو مضبوط دعویدار سمجھا جا رہا تھا اور اس بات کا امکان ظاہر کیا جا رہا تھا کہ ان کے نام پر مہر لگ جائے گی لیکن گنگولی، وی وی ایس لکشمن اور سچن تندولکر جیسے بڑے کھلاڑیوں کی کمیٹی نے فیصلے کو فی الحال ٹال دیا ہے۔ یہ پوچھنے پر کہ کیا وراٹ نے کوچ کے عہدے کے لئے اپنی کوئی پسند دی تھی، گنگولی نے کہاکہ ہم وراٹ کو کریڈٹ دینا چاہیں گے کہ انہوں نے اس معاملے سے خود کو مکمل طور علیحدہ رکھا۔ انہوں نے کوچ کے لیے ناموں پر اپنی طرف سے کچھ بھی نہیں کہا۔

ٹیم انڈیا کیلئے کوچ کی تلاش : سوربھ گنگولی نے کہا : وراٹ کوہلی سے بات چیت کے بعد ہی لیا جائے گا فیصلہ

یہ کہا جا رہا تھا کہ ٹیم انڈیا کے سابق ڈائریکٹر شاستری کپتان وراٹ کی پسند ہیں اور انہوں نے اس بات کو ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ اور اس کمیٹی کو بھی ظاہر کیا تھا لیکن گنگولی نے واضح کیا کہ وراٹ نے اس طرح کی کوئی پسند نہیں بتائی ہے ۔ گنگولی نے کہاکہ ہم ہندستانی کوچ کا اعلان کو لے کر کوئی جلد بازی نہیں کریں گے۔قابل ذکر ہے کہ بی سی سی آئی کے قائم مقام چیئرمین سی کے کھنہ نے کہا تھا کہ ہندستان کو اس سری لنکا دورے سے پہلے نیا کوچ مل جائے گا۔سری لنکا دورے کے لیے ہندستانی ٹیم کا اعلان ہو چکا ہے اور ٹیم کو سری لنکا کے دورے میں 21۔22 جولائی کو کولمبو میں دو روزہ پریکٹس میچ کھیلنا ہے۔

انل کمبلے کے کوچ کے عہدے سے استعفی دینے کے بعد یہ عہدہ خالی ہوا ہے۔تین رکنی کمیٹی کو کوچ کے لیے پیر کو امیدواروں کا انٹرویو لینا تھا۔کوچ کے عہدے کے لیے 10 درخواست آئی تھیں جن میں سے روی شاستری اور ويریندر سہواگ سمیت چھ کو شارٹ لسٹ کیا گیا تھا۔بی سی سی آئی کے کرکٹ سینٹر میں انٹرویو لئے گئے۔کمیٹی سے گنگولی اور لکشمن کرکٹ سینٹر میں موجود تھے جبکہ لندن میں موجود سچن ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے ان سے جڑے رہے ۔ شاستری اور سہواگ کے علاوہ ٹام موڈی، رچرڈ پائي بس، ڈوڈہ گنیش، لال چند راجپوت، لانس كلسنر، راکیش شرما (عمان قومی ٹیم کوچ)، فل شمون اور اوپیندر برہمچاری نے اس عہدے کے لئے درخواست دی تھی ۔نئے کوچ سے دو سال کا معاہدہ ہونا ہے جو 2019 ورلڈ کپ تک کے لئے ہوگا۔

چھ امیدواروں میں سہواگ، پائی بس، راجپوت، شاستری، شمون اور موڈی کا انٹرویو ہونا تھا۔ شاستری ذاتی طور پر انٹرویو کے لئے موجود نہیں تھے۔انہوں نے اسکائپ کے ذریعے برطانیہ سے اپنا انٹرویو دیا۔شاستری چمپئن شپ کے بعد برطانیہ میں ہی رک گئے تھے۔ سہواگ نے کرکٹ سینٹر پہنچ کر اپنا انٹرویو دیا۔ان کاتقریبا دو گھنٹے تک انٹرویو چلا جس کے بعد وہ کرکٹ سینٹر سے چلے گئے۔امیدواروں کے انٹرویو مکمل ہونے کے بعد پریس کانفرنس میں گنگولی نے کوچ کے لیے کچھ دنوں کا انتظار کرنے کا اعلان کیا۔

گنگولی کے ساتھ موجود لکشمن نے بتایا کہ راجپوت، سہواگ، پائی بس، شاستری اور ٹام موڈی نے اپنا انٹرویو دیا۔شمون دستیاب نہیں ہو سکے۔گنگولی نے بتایا کہ کمیٹی تمام تفصیلات کو سربمہر لفافے میں بی سی سی آئی کو سونپ دے گی۔ کمیٹی کے کوچ کا فیصلہ ٹالنے کا مطلب ہے کہ ہندستان کو سری لنکا کے دورے پر ہیڈ کوچ کے بغیر جانا ہو گا ۔ہندستان کو سری لنکا میں پہلا ٹیسٹ 26 جولائی سے کھیلنا ہے۔

گنگولی نے کہاکہ ہم فی الحال کسی جلدبازی میں نہیں ہیں۔سری لنکا دورہ ایک ہفتے بعد ہونا ہے۔ بورڈ کے سیکرٹری امیتابھ چودھری اور سی ای او راہل جوہری فی الحال اپنی ذمہ داری نبھاتے رہیں گے۔ہم وراٹ سے بات کریں گے جب وہ امریکہ سے واپس آئیں گے۔ سابق کپتان نے کہاکہ ہم وراٹ کو بتانا چاہیں گے کہ کوچ اپنے طریقے سے کام کرنا چاہتے ہیں اور اس کے بعد ہی ہم کوچ کا اعلان کریں گے۔ایک بار جب اعلان ہو جائے گا تو کوچ 2019 عالمی کپ تک رہے گا۔

قابل ذکر ہے کہ کمبلے نے اپنا عہدہ وراٹ کے ساتھ تنازعہ کے چلتے ہی چھوڑا تھا۔وراٹ اور ٹیم کے کچھ کھلاڑیوں کو کمبلے کا کام کرنے کا طریقہ پسند نہیں تھا۔کمبلے نے بھی کوچ کے لیے درخواست دی تھی لیکن پھر خراب تعلقات کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے خود کو دوڑ سے ہٹا لیا تھا۔ ہندستان انگلینڈ میں جون میں ختم ہوئی چمپئنز ٹرافی کے بعد کوچ کے بغیر ہے اور اس نے ویسٹ انڈیز کے دورہ کوچ کے بغیر ہی مکمل کیا جہاں اس نے ون ڈے سیریز 3۔1 سے جیت لی اور واحد ٹوئنٹی ۔20 میچ گنوایا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز