جماعت اسلامی کی طلاق ثلاثہ پراسلام کے صحیح موقف کو واضح کرنے کی کوشش

May 06, 2017 05:48 PM IST | Updated on: May 06, 2017 05:48 PM IST

ناندیڑ۔ مسلم پرسنل لا بیداری کے سلسلے میں پورے ملک میں جماعت اسلامی ہند کی جانب سے ان دنوں مہم چلائی جارہی ہے ۔اس مہم کے تحت ناندیڑ میں ایک پریس کانفرنس کا اہتمام کیا گیا ۔پریس کانفرنس میں  جماعت کے ذمہ داران نے تین طلاق ،تعدد ازواج اور حلالہ جیسے موضوعات پراسلام کے صحیح نقطہ نظر کو واضح کرنے کی کوشش کی اور اس سلسلے میں پھیلائی جارہی غلط فہمیوں کو اسلام دشمن طاقتوں کی سازش قراردیا ۔ جماعت اسلامی ہند نے 29 اپریل سے 07 مئی کے دوران پورے ملک میں مسلم پرسنل لا بیداری کے عنوان سےمہم شروع کی ہے ۔ اس مہم کے تحت نکاح ، طلاق، خلع اور حلالہ جیسے اسلام کےعائلی قوانین میں لوگوں کو صحیح معلومات دینے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ اسی طرح بیک وقت تین طلاق کولیکر اسلام کے شرعی قوانین کے خلاف پھیلائی جارہی غلط فہمیوں کا ازالہ کرنے کی بھی کوشش کی جارہی ہے ۔  ناندیڑ کی پریس کانفرنس کے دوران جماعت اسلامی ہند شعبہ خواتین نے مہم کے تحت انجام دی جا رہی سرگرمیوں کے بارے میں معلومات اور مہم کے انعقاد کے مقصد کو واضح کرنے کی کوشش کی ۔

تین طلاق کی آڑ میں اسلام کے عائلی قوانین میں تبدیلی کے سلسلے میں حکومت کی جانب سے ہورہی کوششوں پر تشویش ظاہر کی گئی اور ان کوششوں کو دستور ہند کی طرف سے دی گئی مذہبی آزادی کو ختم کرنے کی ایک سازش کا حصہ بتایا گیا ۔ساتھ ہی طلاق کے معاملہ میں اسلام اور دیگر مذاہب میں پائے جانے والے تناسب کا بھی حوالہ دیتے ہوئے مسلمانوں میں طلاق کے تناسب کو دیگر قوموں کے مقابلہ بہت کم ہونے کی بات کی گئی ۔

جماعت اسلامی کی طلاق ثلاثہ پراسلام کے صحیح موقف کو واضح کرنے کی کوشش

مہم کے تحت پچھلے دو ہفتوں کے دوران انجام دی گئی سرگرمیوں کی روداد بھی سنائی گئی ۔اور اس کے ذریعہ پڑنے والے مثبت اثرات کے بارے میں معلومات دی گئی ۔ جماعت کے ذمہ داران نے اس بات کا بھی اشارہ دیا کہ اسلام کے قوانین میں تبدیلی کا کسی کو حق نہیں ہے اور حکومت بھی اس معاملے میں مداخلت کرنے کی کوشش نہ کرے ۔مسلمان کسی بھی صورت میں اپنے شرعی قوانین میں تبدیلی برداشت کرنے کے لئے تیار نہیں ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز