جماعت اسلامی ہند کے اجتماع میں ملی اتحاد کیلئے دوسالہ دس نکاتی پرگرام کا اعلان

Jan 02, 2017 11:04 PM IST | Updated on: Jan 02, 2017 11:04 PM IST

ناندیڑ : طلاق ثلاثہ اور تعددازدواج کے مسئلہ پر مسلمانوں پرلگائے جارہے ہیں بے بنیاد الزامات کو دور کرنے کیلئے مختلف مذہبی جماعتوں کی جانب سے مہم چلائی جارہی ہے ۔ اسی سلسلہ میں جماعت اسلامی ہند ناندیڑ کی جانب سے ایک روزہ اجتماع عام کا انعقاد کیا گیا ۔ اجتماع میں مختلف مکاتب فکر کے علما نے خطاب کرتے ہوئے ملی اتحاد کو وقت کی اہم ضرورت قراردیا ۔

اجتماع میں مردوں کے ساتھ ساتھ خواتین نے بھی کثیر تعداد میں شرکت کی اور یہ پیغام دینے کی کوشش کی کہ تحفظ شریعت کے عنوان سے آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کی جانب سے چلائی جا رہی تحریک میں وہ بھی برابر کی شریک ہیں اور تین طلاق کے مسئلہ پر مسلم پرسنل لا بورڈ کے موقف کی حمایت کرتی ہیں ۔

جماعت اسلامی ہند کے اجتماع میں ملی اتحاد کیلئے دوسالہ دس نکاتی پرگرام کا اعلان

اجتماع میں ناندیڑ ضلع کے مختلف مقامات سے ہزاروں کی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی ۔ اجتماع کے دوران اصلاح معاشرہ کیلئے دوسال پر مبنی ایک دس نکاتی پروگرام پیش کیا گیا ہے اور پروگرام کو کامیاب بنانے کیلئے تمام مکاتب فکر کے علما اور دانشوروں کو متحد کرنے کا منصوبہ بنایا گیا ہے ۔

اصلاح معاشرہ کے عنوان سے منعقدہ اجتماع میں مسلمانوں کو درپیش مسائل اور ان کا حل بتایا گیا ۔ ملک کے موجودہ حالات طلاق ثلاثہ اور تعدد ازدواج کے معاملہ میں شرعی قوانین میں تبدیلی کی جو باتیں کی جارہی ہیں، ان باتوں کو ایک سازش قراردیتے ہوئے مسلمانوں میں سماجی بیداری لانے کا اعلان کیا گیا ۔

اجتماع عام میں سماجی مسائل کے علاوہ معاشرتی مسائل پر بھی تبصرہ کیا گیا ۔ نکاح ،طلاق اور وراثت جیسے شرعی معاملات میں نزاع پیدا ہونے پر ان مقدمات کو عدالتوں میںلے جانے کی بجائے شرعی پنچایت اور دارلقضا سے رجوع کرنے کی بھی تلقین کی گئی ۔ مسلم خواتین کے ساتھ ہمدردی کے نام پر انہیں بد نام کرنے کوششوں کو فسطائی تنظیموں کی ایک چال قراردیتے ہوئے معاشرہ کی اصلاح کے لیےایک مثالی کردار پیدا کرنے کی بات کی گئی ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز