جمعیت علماء ہند نے گجرات ہائی کورٹ کے فیصلے کا کیا خیر مقدم

Oct 09, 2017 05:49 PM IST | Updated on: Oct 09, 2017 05:49 PM IST

 احمدآباد۔ گجرات ہائی کورٹ نے سرخیوں میں رہنے والے گودھرا سانحہ میں نچلی عدالت کی جانب سے 11قصورواروں کی دی گئی پھانسی کی سزا کو آج عمرقید میں تبدیل کردیا۔ ہائی کورٹ کے جج جسٹس اے ایس دوے اور جسٹس جی آراودھوانی کی بینچ نے آج 11 قصورواروں کو نچلی عدالت کے ذریعہ دی گئی پھانسی کی سزا کو عمر قید میں تبدیل کر دیا۔ اس کے ساتھ ہی نچلی عدالت کے ذریعہ20 قصورواروں کوعمر قید اور63 ملزمین کو بری کئے جانے کے فیصلے کو برقرار رکھا ہے ۔ فیصلہ آنے کے بعد جہاں ایک طرف وی ایچ پی سپریم کورٹ جانے کی تیاری کر رہی ہے وہیں دوسری طرف ملزمین کی قانونی مدد کرنے والی تنظیم جمعیت علماء ہند کے جنرل سكریٹری پروفیسر نثار انصاری نے کہا کہ ہم فیصلہ کا خیرمقدم کرتے ہیں لیکن ملزمین کو باعزت بری کروانے کے لئے ہم آنے والے دنوں میں سپریم کورٹ جانے کی تیاری کر رہے ہیں ۔

واضح ہو کہ گودھرا اسٹیشن پر 27 فروری 2002 کو سابرمتی ایکسپریس کے ایک ڈبے میں آگ لگا دی گئی تھی، جس میں زیادہ تر مسافر ایودھیا سے لوٹ رہے تھے۔ اس ڈبے میں 59 مسافر جل کر خاک ہو گئے ، جس کے بعد پورے گجرات  میں ہوئے فسادات میں 1000 سے زیادہ لوگوں کی جانیں گئیں اور کروڑوں کی ملکیت تباہ وبرباد ہو گئی۔

جمعیت علماء ہند نے گجرات ہائی کورٹ کے فیصلے کا کیا خیر مقدم

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز