گجرات : اسکول کی کتاب میں حضرت عیسی کو بتایا گیا حیوان ، افسران  نے کہا : ٹائپنگ کی غلطی سے ہوا

Jun 10, 2017 10:27 AM IST | Updated on: Jun 10, 2017 10:27 AM IST

احمد آباد : گجرات تعلیمی بورڈ ایک مرتبہ پھر سرخیوں میں ہے اور بورڈ کی بڑی لاپروائی سامنے آئی ہے ۔ کلاس نو کی ہندی کی کتاب میں حضرت عیسی مسیح کو حیوان بتایا گیا ہے ۔ اس میں کہا گیا ہے کہ اس حیوان کی کہانیوں کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا ۔ تاہم جب اس معاملہ پر گجرات کی کرکری ہونی شروع ہوئی تھی تو ریاست کے وزیر تعلیم اور ٹیکسٹ بک بورڈ کے چیئرمین نے اس میں جلد اصلاح کرنے کی بات کہی ہے ۔ حکام کا کہنا ہے کہ غلط ٹائپنگ کی وجہ سے یہ غلطی ہوئی ہے ۔

کلاس نو کی ہندی کتاب کے باب 16 میں یہ غلطی سامنے آئی ہے ۔ اس باب کا عنوان ہے، 'ہندوستانی ثقافت میں استاد - شاگرد تعلقات '۔ اسی سلسلہ میں صفحہ نمبر 70 پر حضرت عیسی مسیح کے بارے میں لکھا ہے کہ اس سلسلے میں حیوان عیسی کا ایک بیان ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔

گجرات : اسکول کی کتاب میں حضرت عیسی کو بتایا گیا حیوان ، افسران  نے کہا : ٹائپنگ کی غلطی سے ہوا

ایڈوکیٹ سبرامنیم ایئر نے اس غلطی کی طرف توجہ دلائی ۔ ان کا کہنا ہے کہ یہ غلطی تعزیرات ہند کی دفعہ 295 (اے ) کے تحت آتی ہے ، جو کسی طبقہ کے مذہبی جذبات کو مجروح کرنے کے سلسلے میں ہے ۔

وکیل ایئر نے نیوز 18 سے کہا کہ عیسی کو یہاں طلبہ کے سامنے منفی طاقت کے طور پر دکھایا گیا ہے ۔ یقینی طور پر یہ لوگوں کے مذہبی جذبات کو مجروح کرنے والا معاملہ ہے ۔ ایئر نے کہا کہ یقینا یہ غلطی جان بوجھ کر نہیں کی گئی لیکن اس سے دو فرقوں کے درمیان کشیدگی تو پیدا ہو سکتی ہے ۔ قانون وانتظام کا مسئلہ بھی پیدا ہوسکتا ہے ۔

خیال رہے کہ یہ پہلا موقع نہیں ہے جب گجرات کی نصابی کتابوں میں غلطیاں سامنے آئی ہیں ۔ پہلے بھی ایک نصابی کتاب میں دعوی کیا گیا تھا کہ دوسری جنگ عظیم میں جاپان نے امریکہ پر جوہری بم گرایا تھا ۔ اسی طرح ایک اور نصابی کتاب میں مہاتما گاندھی کی برسی کی تاریخ غلط دی گئی ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز