جاؤرا سیمی مقدمہ : بری ملزمین کے خلاف داخل اپیل سماعت کیلئے منظور، جمعیۃ علما ہند کرے گی دفاع

جمعیۃ علماء قانونی امداد کمیٹی کے سربراہ گلزار اعظمی کے مطابق اس معاملہ کے تین ملزمین محمد ساجد عبدالستار، ابو فضل خان محمد عمران خان اور محمد اقرا عبدالراؤف نے جمعیۃ علما ء مہاراشٹر (ارشد مدنی) قانونی امداد کمیٹی سے قانونی امداد طلب کی ہے

Jun 10, 2018 11:48 PM IST | Updated on: Jun 10, 2018 11:48 PM IST

ممبئی: مدھیہ پردیش کے شہر جاؤرا سے تعلق رکھنے والے چار ملزمین جن پر ممنوعہ تنظیم سیمی کے رکن ہونے اور دہشت گردانہ کارروائیاں انجام دینے کے لئے بینک لوٹنے کے الزامات عائد کئے گئے تھے کو نچلی عدالت نے ناکافی ثبوت کی بنیاد پر مقدمہ سے باعزت بری کردیا تھا جس کے خلاف ریاستی سرکار نے ہائی کورٹ میں اپیل داخل کی تھی ، ا س کو ہائی کورٹ نے سماعت کے لئے منظور کرلیا ہے ملزمین کو نوٹس جاری کردیا گیا ہے ۔

جمعیۃ علماء قانونی امداد کمیٹی کے سربراہ گلزار اعظمی کے مطابق اس معاملہ کے تین ملزمین محمد ساجد عبدالستار، ابو فضل خان محمد عمران خان اور محمد اقرا عبدالراؤف نے جمعیۃ علما ء مہاراشٹر (ارشد مدنی) قانونی امداد کمیٹی سے قانونی امداد طلب کی ہے اور اس تعلق سے انہوں نے مقامی وکیل محرم علی کے توسط سے ان کے خلاف داخل اپیل کی نقول اور دیگر دستاویزات دفتر جمعیۃ علماء ارسال کئے ہیں ۔

جاؤرا سیمی مقدمہ : بری ملزمین کے خلاف داخل اپیل سماعت کیلئے منظور، جمعیۃ علما ہند کرے گی دفاع

فائل فوٹو

گلزار اعظمی نے قانون امداد کی درخواست کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ جمعیۃ علماء جبل پور ہائی کورٹ میں ملزمین کا دفاع کرے گی اور اس تعلق سے سینئر وکلاء سے صلاح ومشورہ کیا جارہا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز