ممبئی حملہ 26 نومبر 2008: سپریم کورٹ نے ہیمنت کرکرے معاملے کی دوبارہ جانچ سے کیا انکار

Jul 06, 2018 09:10 AM IST | Updated on: Jul 06, 2018 09:11 AM IST

مہاراشٹر کے سابق اے ٹی ایس کے سربراہ ہیمنت کرکرے کی موت کی جانچ دوبارہ کرائے جانے کی مانگ سے متعلق عرضی سپریم کورٹ نےخارج کر دی ہے۔سپریم کورٹ میں عرضی دائر کر کے اس معاملے کو پھر سے کھلونے اور دوبارہ جانچ کرانے کا مطالبہ کیا گیا تھا۔عرضی میں کہا گیا کہ ممبئی میں 26 نومبر 2008 میں ہوئی ہیمنت کرکرے کیموت دہشت گردانہ حملے کے دوران ہوئی تھی بلکہ ان کی موت سازش کے تحت کی گئی تھی۔عرضی میں بتایا گیا تھا کہ جنوبی انتہا پسندوں نے سازش کے تحت ہیمنت کرکرے کا قتل کیا اور اسے دہشت گردانہ حملے میں مارے جانے کا رنگ دے دیا۔

واضح ہو کہ 26 نومبر 2008 کو ممبئی میں ہوئے دہشت گردانہ حملے میں 166 لوگوں کی موت ہو گئی تھی جبکہ سیکڑوں لوگ زخمی ہو گئے تھے۔دس کی تعداد میں ممبئی میں گھسے دہشت گردوں نے ہوٹل تاج پیلیس میں گھس کر اندھا دھند گولیاں چلائی تھیں۔

ممبئی حملہ 26 نومبر 2008: سپریم کورٹ نے ہیمنت کرکرے معاملے کی دوبارہ جانچ سے کیا انکار

مہاراشٹر کے سابق اے ٹی ایس کے سربراہ ہیمنت کرکرے کی 26  نومبر 2008 ممبئی حملے میں گولی لگنے ہوئی تھی موت۔

بتادیں کہ دہشت گردوں کو پکڑنے کیلئے چلائی گئی مہم کی قیادت کر رہے مہاراشٹر کے سابق اے ٹی ایس کے سربراہ ہیمنت کرکرے کی اس دوران گولی لگنے سے موت ہو گئی تھی۔

 

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز