مہاراشٹراردواکادمی کے انعامات کا اعلان ، اراکین کو اعتماد میں نہ لینے کاالزام

Nov 03, 2017 09:48 PM IST | Updated on: Nov 03, 2017 09:48 PM IST

ممبئی: مہاراشٹراسٹیٹ ساہتیہ اکادمی کے زیر اہتمام 2015 اور 2016کے لیے اردوزبان وادب اور تعلیم کے فروغ کے لیے خدمات انجام دینے والی شخصیات کو انعامات سے نوازا گیا ،جن میں قاضی عبدالستارعلی گڑھ اور فضیل جعفری ممبئی کو مرزا غالب اعزاز سے نوازاگیا ہے جبکہ اردوصحافت میں خدمات انجام دینے کے لیے بیڑ کے روزنامہ تعمیر کے مدیر قاضی مخدوم ،اردونیوز کے سیّد محمد عباس،روزنامہ انقلاب کے عاصم جلال ،روزنامہ سہارا کے معراج انورسمیت آٹھ صحافیوں کو انعامات دینے گئے اورخصوصی انعامات کی فہرست میں دونوں سال کے لیے 10-10افراد شامل ہیں اور ڈاکٹر عبدالرحیم اندرے ،ڈاکٹر محمد علی پاٹنکر ،اسلم فقیہ ،اقبال نیازی بھی شامل کیے گئے ہیں۔

مہاراشٹراردواکادمی کے چیئرمین اور ریاستی وزیر برائے اقلیتی امور ونودتاوڑے نے ان انعامات کا اعلان کیا ہے اور 13 نومبر کو ایک پُروقار تقریب میں یشونت راؤچوان آڈیٹوریم میں منعقد ہوگی اور مختلف شعبوں میں اردوکو فروغ دینے کے لیے سرگرم 116شخصیات کو ریاستی اعزازت دیئے جائیں گے جن میں ادب،صحافت،تعلیمی اور سماجی میدانوں میں خدمات دینے والے افراد شامل ہیں۔اکادمی کے اراکین کو اعتماد میں نہ لینے کی وجہ سے ایک بار پھر تنازعہ کا اندیشہ ہے کیونکہ کئی افراد کو اثرورسوخ کی بنیاد پر اعزازات دیے گئے ہیں۔

مہاراشٹراردواکادمی کے انعامات کا اعلان ، اراکین کو اعتماد میں نہ لینے کاالزام

اردواکادمی نے امسال 2015اور 2016کے لیے انعامات کا اعلان کیا ہے ،مرزاغالب ایوار ڈ کے لیے فضیل جعفری اور علی گڑھ قاضی عبدالستار کا انتخاب عمل میں آیا ہے جبکہ پونے کے قاصی مشتاق احمد اور ناگپور کے وکیل نجیب احمد کو ولی دکنی سے نوازاجائے گا ۔نئے ابھرتے ہوئے ادیبوں میں امراواتی کے یحییٰ جمیل اورفرحان حنیف وارثی کے ساتھ ساتھ محترمہ اسودگوہر اورنگ آباداوررشید اشرف ممبئی کے نام شامل کیے گئے ہیں۔

اردوصحافت کے لیے سال 2015اور2016کے لیے چار چار انعامات دیئے گئے ہیں۔اس فہرست میں سیّد محمد عباس(ممبئی اردونیوز)،انصاری اصغر جمیل (اردومیلا ناگپور)،قاضی مخدوم(روزنامہ تعمیر بیڑ)اور مشرف شمسی (پہلی خبر تھانے )شامل ہیں جبکہ 2016 کے لیے صحافت میں عاصم جلال (نیوزایڈیٹر روزنامہ انقلاب ،ممبئی)،رفیق احمد مشتاق انصاری (خیال اثرمالیگانویج جواردوٹائمز کے نمائندہ ہیں)،منشی محمد اقبال صفدرعلی(روزنامہ ہندوستان ،ممبئی)اورمعراج انور(روزنامہ سہارا،ممبئی )شامل ہیں۔جوکہ فی الحال ممبئی کے انچارج ہیں۔

اکادمی کی خصوصی انعامات کی فہرست میں ڈاکٹر عبدالرحیم اندرے ،ڈاکٹر محمد علی پاٹنکر ،اسلم فقیہ ،سیّد فیروز اشرف کو تعلیمی میدان میں بہتر ین کارکردگی کے لیے انعامات دیئے گئے ہیں ،اس فہرست میں عبداللہ حسن چودھری احمد نگر،محسن احمدبشیراورنگ آباد،عبدالرؤ ف امام خان ،نئی ممبئی ،آئی جی شیخ ،کولہا پور ،راجندر جوشی ،پونے اور انجنیئر حفیظ درانی شامل ہیں جبکہ 2016میں ایک بار اقبال نیازی کا نام نظرآتا ہے ،جبکہ دیگر افراد میں مجتبی فاروق خلدآباد،ہارون رکھنگی ،ممبئی،نظیرالدین ناگپور،جمیل گلریز ممبئی ،پرکاش پاتھریے ممبئی،صبیحہ بیگم خان ،بیڑ،عبدالکریم عطار،پونے ،انصاری مشیر احمد ،ممبئی اور عبدالوحیداحمد کو شامل کیا گیاہے۔ان کی خدمات کا احاطہ نہیں کیا گیا ہے۔

یونیورسٹی کی سطح پر تعلیمی خدمات کیلئے اورنگ آباد کی ڈاکٹر کریتی مالنی وٹھل راؤ جاولے کو ایوارڈسے نوازاگیا ہے جبکہ کالجوں کی سطح پر ڈاکٹر سروش قاضی ناگپور،ڈاکٹر مسرت صاحب علی ،ممبئی اور ڈاکٹر شفورنہاراورنگ آباد شامل ہیں اور 2016کی فہرست میں ڈاکٹر اکولہ غوث ،بیڑ،دانش غنی،رتناگیری اور محترمہ شاہدہ مناف رتناگیری شامل ہیں۔اسکول اور جونیئر کالج کی سطح پر 15-15انعامات دیئے گئے ہیں جبکہ تاریخ ،ریسرچ،سوانح عمری، سائنس، ٹیکنک کھیل کود،کہانی ،،ڈرامہ ،مزاحیہ ادب،ترجمہ اور بچوں کے ادب پر بھی ادیبوں ،مصنفوں اور اساتدہ کو اعزاز سے نوازا گیاہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز