Live Results Assembly Elections 2018

مالیگاؤں 2008 بم دھماکہ کیس :  مزید دو بھگوا ملزمین کو این آئی اے عدالت نے مشروط ضمانت پر کیا رہا

بھگوا سیاسی جماعتوں کی ایک مبینہ منصوبہ بند سازش کے تحت آج ایک بار پھر مالیگاؤں 2008بم دھماکہ معاملے کے دو بھگواء ملزمین کو خصوصی این آئی اے عدالت نے مشروط ضمانت پر رہا کئے جانے کے احکامات صادر کئے

Sep 19, 2017 06:48 PM IST | Updated on: Sep 19, 2017 06:48 PM IST

ممبئی: بھگوا سیاسی جماعتوں کی ایک مبینہ منصوبہ بند سازش کے تحت آج ایک بار پھر مالیگاؤں 2008بم دھماکہ معاملے کے دو بھگواء ملزمین کو خصوصی این آئی اے عدالت نے اس بنا پر مشروط ضمانت پر رہا کئے جانے کے احکامات صادر کئے کہ اس معاملے کے کلیدی ملزمین سادھوی پرگیا سنگھ ٹھاکر اور کرنل پروہیت کو پہلے ہی عدالت عظمی نے ضمانت پر رہا کیا تھا ۔ ممبئی کی سیشن عدالت میں قائم خصوصی قومی تفتیشی ایجنسی کے معاملات کے سماعت کرنے والی عدالت کے جج ایس ڈی ٹیکولے نے ملزمین سدھاکرچتروید(سوامی) اور سدھار دویدی کو مشروط ضمانت پر رہا کئے جانے کے احکامات جاری کئے ۔

اس سے قبل ملزمین کو ضمانت پر ررہا کیئے جانے کے لیئے ملزمین کے وکلاء نے عدالت میں یہ دلائل پیش کیئے تھے کہ اب جبکہ اس معاملے کے دوکلیدی ملزمین کو ممبئی ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ نے ضمانت پر رہاکیا ہے ان کے موکلین کو بھی ضمانت دی جائے جسے عدالت نے بالآخیر قبول کرلیا حالانکہ متاثرین کی پیروی کرتے ہوئے جمعیۃ علماء مہاراشٹر (ارشد مدنی) نے ملزمین کو ضمانت پر رہا کئے جانے کی سخت لفظوں میں مخالفت کی تھی لیکن استغاثہ اور مداخلت کارکے دلائل کو عدالت نے یکسر مسترد کردیا اور ملزمین کو راحت پہنچائی۔

مالیگاؤں 2008 بم دھماکہ کیس :  مزید دو بھگوا ملزمین کو این آئی اے عدالت نے مشروط ضمانت پر کیا رہا

خصوصی عدالت کے فیصلہ پر اپنے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے جمعیۃ علماء مہاراشٹر قانونی امداد کمیٹی کے سربراہ گلزار اعظمی نے کہا کہ وہ عدالت کے فیصلہ کا احترام کرتے ہیں لیکن وہ عدالت کے فیصلہ سے مطمین نہیں ہیں اور وہ سینئر وکلاء سے صلاح و مشورہ کرنے کے بعد اگلا لائحہ عمل تیار کریں گے۔

گلزار اعظمی نے کہا کہ اس فیصلہ سے بم دھماکوں کے متاثرین سمیت ان افراد کو شدید دھچکہ پہنچا ہے جو بھگواء دہشت گردی کے اصلی چہرے کو کیفر کردارتک پہنچتے دیکھان چاہتے ہیں لیکن ایک منصوبہ بند سازش کے تحت پہلے معاملے کی تفتیش این آئی اے کے سپرد کی گئی جس کی کوئی ضرورت نہیں تھی اس کے بعد سے ہی بھگواء ملزمین کو یکے بعد دیگر راحتیں ملتی گئیں اور آج اس معاملے کا سامنا کرنے والے آدھے سے زیادہ ملزمین ضمانتوں پر جیل سے رہا ہوچکے ہیں ۔

Loading...

گلزار اعظمی نے مزید کہا اس معاملے میں اول دن سے ہی قومی تفتیشی ایجنسی این آئی اے کا کردار مشکور رہا ہے کیونکہ وہ آج تک ملزمین کے خلاف فرد جرم عائد نہیں کراسکی جس کی وجہ سے معاملے کی سماعت شروع ہونے میں دیری ہورہی ہے جس کا براہ راست فائدہ بھگواء ملزمین کو ہورہا ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ملزمین کو ضمانت کی ضمانت پر رہائی نہ ہوسکے اس کے لیئے مداخلت کار کے وکلاء نے بھرپور کوشش کی لیکن ایک بار پھر این آئی اے کی مبینہ ملی بھگت سے ملزمین کو ضمانت حاصل کرنے میں کوئی پریشانی نہیں ہوئی جس سے ان تمام لوگوں کے جذبات شدید مجروح ہوئے ہیں جو مالیگاؤں بم دھماکہ معاملے کے ملزمین کو جیل کی سلاخوں کے پیچھے دیکھنا چاہتے ہیں ۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز