مالیگاؤں بم دھماکہ معاملہ: کرنل پروہت کو سپریم کورٹ سے ملی ضمانت

Aug 21, 2017 11:34 AM IST | Updated on: Aug 21, 2017 12:02 PM IST

نئی دہلی۔  سپریم کورٹ نے 2008 کے مالیگاؤں دھماکہ معاملہ کے ملزم لیفٹننٹ کرنل شری کانت پرساد پروہت کو مشروط ضمانت پر رہا کرنے کا آج حکم دیا۔ جسٹس آر کے اگروال کی صدارت والی بنچ نے کرنل پروہت کی ضمانت کی عرضی منظور کرلی۔ وہ گزشتہ تقریباً نو برسوں سے جیل میں تھے۔ کورٹ نے اپنے حکم میں کہا کہ وہ بمبئی ہائی کورٹ کے متعلقہ حکم کو خارج کرتا ہے۔عدالت نے حالانکہ کرنل پروہت پر کچھ شرائط بھی عائد کی ہیں، جن میں ان کے  ملک سے باہر جانے پر پابندی بھی شامل ہے۔ واضح رہے کہ ہائی کورٹ نے کرنل پروہت کی ضمانت کی درخواست خارج کردی تھی، جس کے خلاف انہوں نے عدالت عظمی کا دروازہ کھٹکھٹایا تھا۔

اس سے قبل عدالت نے گزشتہ 17 اگست کو اس معاملے میں لیفٹننٹ کرنل پروہت کی ضمانت کی عرضی پر فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔ لیفٹننٹ کرنل پروہت کی جانب سے معروف وکیل ہریش سالوے نے اس مقدمہ کے ملزمین کے ساتھ دوہرا پیمانہ اختیار کرنے کا این آئی اے پر الزام لگاتے ہوئے کہا تھا کہ جب ملزم سادھوی پرگیہ سنگھ ٹھاکر کو ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیا جاسکتا ہے تو ان کے مؤکل کو کیوں نہیں؟

مالیگاؤں بم دھماکہ معاملہ: کرنل پروہت کو سپریم کورٹ سے ملی ضمانت

مالیگاؤں دھماکہ معاملہ کے ملزم لیفٹننٹ کرنل شری کانت پرساد پروہت: فائل فوٹو۔

مسٹر سالوے نے اس معاملے کے گواہوں کے بیانوں پر بھی سوال کھڑے کئے تھے۔ انہوں نے کہا کہ عدالت کے مفاد میں کرنل پروہت کو ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیا جانا چاہئے، جبکہ این آئی اے نے ان کی اس درخواست کی پرزور مخالفت کی تھی۔ این آئی اے کی دلیل تھی کہ لیفٹننٹ کرنل پروہت کے خلاف خاطرخواہ ثبوت موجود ہیں جبکہ سادھوی پرگیہ سنگھ ٹھاکر کے خلاف کوئی ثبوت نہیں ہے۔ استغاثہ ایجنسی نے کہا تھا کہ اس معاملے میں بمبئی ہائی کورٹ کا فیصلہ برقرار رکھا جانا چاہئے۔

کرنل پروہت نے بمبئی ہائی کورٹ کی جانب سے ضمانت کی عرضی مسترد کئے جانے کو چیلنج کیا تھا، جبکہ دھماکہ کے متاثرین میں سے ایک کے والد نثار احمد حاجی سید بلال نے سادھوی پرگیہ کو ضمانت پر رہا کرنے کے ہائی کورٹ کے 25 اپریل کے حکم کو چیلنج کیا۔ حاجی بلال نے سادھوی پرگیہ سنگھ ٹھاکر کی ضمانت رد کرنے کی درخواست عدالت عظمی سے کی تھی۔ واضح رہے کہ مہاراشٹر کے ضلع ناسک میں فرقہ وارانہ نقطہ نظر سے حساس مالیگاؤں میں 29 ستمبر 2008 کو ہوئے بم دھماکہ میں سات لوگ مارے گئے تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز