مالیگاوں : بجلی کمپنی کی لاپرواہی سےماڈرن لوم لگانے کے بعد بھی بنکرمعاشی بحران سے دو چار

مہاراشٹرکی پاورلوم صنعت پچھلے چند سالوں سے بند ہونےکی دہلیز پرہے۔ اس لئے بنکروں نے یہ فیصلہ کیا کہ وہ جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کریں گے۔

Dec 29, 2017 04:53 PM IST | Updated on: Dec 29, 2017 04:53 PM IST

مالیگاؤں : مہاراشٹرکی پاورلوم صنعت پچھلے چند سالوں سے بند ہونےکی دہلیز پرہے۔ اس لئے بنکروں نے یہ فیصلہ کیا کہ وہ جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کریں گے۔ حکومت مہاراشٹر کی جانب سےمالیگاؤں شہر کےسائینہ شیوار میں حکومت کی جانب سےایم آئی ڈی سی فراہم کی گئی، جسے انڈسٹریئل پارٹ کا نام دیا گیا۔ بنکروں نے یہاں پر اپنے کارخانے تیار کرلئے اور جدید پاورلوم لگالئے ہیں ، مگر بجلی کی فراہمی مکمل نہ ہونے کی وجہ سے انہیں کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ اس سلسلے میں مقامی ایم ایل اے آصف شیخ کی قیادت میں بجلی کمپنی کےافسران کے ساتھ راؤنڈ ٹیبل میٹنگ کرکےحل نکالنےکی کوشش کی گئی۔

پچھلے دس سالوں سے مالیگاؤں شہر کے سائینہ شیوار میں انڈسٹریئل پارٹ کے نام پر انڈسٹریئل زون بنایا گیا، جس میں شہر کے بنکروں نے پلاٹ خرید کر اپنے کارخانے جدید پاور لوم کے ساتھ کھڑے کئے، مگر حکومت اور بجلی کمپنی کی جانب سے وعدے کےمطابق بجلی کی فراہمی نہیں کی جا رہی ہے، جس کی وجہ سے کروڑوں کی لاگت سے تیار کئے گئےیہ کارخانےمعاشی بحران سے دو چارہیں۔

مالیگاوں : بجلی کمپنی کی لاپرواہی سےماڈرن لوم لگانے کے بعد بھی بنکرمعاشی بحران سے دو چار

حلقہ کے ایم ایل اے آصف شیخ رشید کی قیادت میں ایم آئی ڈی سی کےبنکراور بجلی کمپنی کے افسران کےدرمیان ایک راؤنڈ ٹیبل میٹنگ ہوئی، جس میں بنکروں کےاس مسئلہ پربجلی کمپنی کی کاہلی اورٹھیکیدار کی سستی کا معاملہ سامنےآیا ۔ ایک مہینے میں حالات ٹھیک کرکے بجلی فراہم کرنے کا وعدہ کیا گیا۔ بجلی کمپنی کے افسران نے اس کا اعتراف کیا کہ ان کے ٹھیکیدار کےکام میں تاخیر کی وجہ سے بنکروں کو وقت پر بجلی نہیں مل پائی۔ انہوں نے تین مہینے میں کام مکمل کرنے کا وعدہ کیا ۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز