ورلڈ کپ میں جیتا تھا مین آف دی سیریز کا خطاب ، آج گائے اور بھینس چرانے پر ہے مجبور !۔

ایک طرف جہاں ٹیم انڈیا کے کھلاڑیوں پر کروڑوں کی برسات ہورہی ہے وہیں دوسری جانب ایک کرکٹ کھلاڑی ایسا بھی ہے ، جس نے ورلڈ کپ میںمین آف دی سیزیز کا خطاب جیتا تھا ، لیکن اب وہ دانہ دانہ کیلئے محتاج ہے۔

May 31, 2018 11:24 PM IST | Updated on: May 31, 2018 11:24 PM IST

ایک طرف جہاں ٹیم انڈیا کے کھلاڑیوں پر کروڑوں کی برسات ہورہی ہے وہیں دوسری جانب ایک کرکٹ کھلاڑی ایسا بھی ہے ، جس نے ورلڈ کپ میںمین آف دی سیزیز کا خطاب جیتا تھا ، لیکن اب وہ دانہ دانہ کیلئے محتاج ہے۔ ہم بات کررہے ہیں بھالاجی ڈامور کی جو 1998 میں ہوئے پہلے نابینا کرکٹ ورلڈ کپ میں مین آف دی سیریز بنے تھے اور ہندوستان نے ورلڈ چمپئن کا خطاب بھی اپنے نام کیا تھا ، مگر آج یہ کھلاڑی گائے اور بھینس چراتا ہے۔

بھالاجی ڈامور کا کیریئر انتہائی شاندار رہا ہے۔ انہوں نے 125 میچوں میں 3125 رن بنائے ہیں۔ ساتھ ہی ساتھ بھالاجی ڈامور نے 150 وکٹ بھی لئے ۔ سال 1998 ورلڈ کپ میں بھی شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے ڈامور کو ایوارڈ بھی ملا ۔ مگر بھالاجی ڈامور کو کوئی نوکری نہیں ملی ، جس کی انہیں سب سے زیادہ ضرورت تھی۔

ورلڈ کپ میں جیتا تھا مین آف دی سیریز کا خطاب ، آج گائے اور بھینس چرانے پر ہے مجبور !۔

ورلڈ کپ میں جیتا تھا مین آف دی سیریز کا خطاب ، آج گائے اور بھینس چرانے پر ہے مجبور

نیشنل ایسوسی ایشن بلائنڈ کے وائس پریزیڈنٹ بھاسکر مہتا کا ماننا ہے کہ ہندوستانی بلائنڈ ٹیم میں بھالاجی ڈامور جیسا کوئی آل راونڈر نہیں آیا ہے۔ بھالا جی ڈامور کو سچن تیندولکر تک کہا جاتا تھا ۔ حالانکہ انہیں ان کے ٹیلنٹ کا کوئی فائدہ نہیں ملا ۔ آج یہ کھلاڑی کھیتی باڑی اور گائےبھینس چراکر اپنے کنبہ کی پرورش کررہا ہے۔ بھالاجی ڈامور گجرات کے سابرکانٹھا میں رہتے ہیں۔ ان کی اہلیہ اور ایک بچہ بھی ہے۔ ان کے گھر پر برتن تک نہیں ہے ۔ ساتھ ہی پورا کنبہ زمین پر ہی سوتا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز