فرقہ وارانہ فساد کے بعد کی رک گئی تھیں مسلم لڑکیوں کی شادیاں ، جمعیۃ علما ہند کرائے گی 27 جوڑوں کی اجتماعی شادی

May 20, 2017 01:09 PM IST | Updated on: May 20, 2017 01:09 PM IST

احمد آباد : گجرات کے پاٹن ضلع میں موجود وڈاولي میں 26 مارچ کو ہوئے فرقہ وارانہ فساد کے بعد مسلم تنظیم سے وابستہ لوگوں نےعلاقہ میں رہنے والے مسلم سماج کے لوگوں کی زندگی پھر سے پٹری پر لانے کے لئے بڑھ چڑھ کر مدد کی تھی، لیکن گجرات جمعیت علما ہند نے اب لوگوں کی زندگی کو بہتر بنانے کے ساتھ ہی ساتھ رشتہ بھی بہتر بنانے کا منصوبہ بنایا ہے۔ جمعیت علما ہند کی جانب سے وڈالی میں رہنے والی لڑکیوں کی اجتمای شادی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ 21 مئی یعنی اتوار کو وڈالی میں 27 لڑکیوں کی اجتمای شادی کروائی جائے گی ۔

گجرات جمعیت علمائے ہند کے نائب صدرمفتی عبدالقیوم نے کہا کہ ہمیں بتایا گیا تھا کہ گاؤں کی کچھ بچیوں کی شادیاں اس سال ہونے والی تھیں ، لیکن فسادات کی وجہ سے شادی نہیں ہو پائے گی ۔ اس سلسلہ میں معلومات ملنے کے بعد سے ہم نے اجتمای شادی کا منصوبہ بنایا اور آج اللہ کے فضل سے وہ موقع آ گیا ہے جب ایک ساتھ 27 لڑکیوں کی شادیاں کروائی جا رہی ہیں۔

فرقہ وارانہ فساد کے بعد کی رک گئی تھیں مسلم لڑکیوں کی شادیاں ، جمعیۃ علما ہند کرائے گی 27 جوڑوں کی اجتماعی شادی

انہوں نے کہا کہ ہم اپنی لڑکیوں کو بطور تحفہ نئے گھر میں ضرورت کے سارے سامان دے رہے ہیں ، لیکن اسے جہیز کے طور پر نہیں دیا جا رہا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز