طلاق ثلاثہ کی آڑ میں شریعت میں مداخلت کی کوششیں کی جارہی ہیں : مولانا عطا الرحمان وجدی

Jan 11, 2018 11:10 PM IST | Updated on: Jan 11, 2018 11:10 PM IST

اورنگ آباد: ملت اسلامیہ ان دنوں شدید آزمائشی مراحل سے گز رہی ہے، ایسے حالات میں باہمی اتحاد کے ذریعہ ہی باطل طاقتوں کا مقابلہ کیا جا سکتا ہے ؟ ان خیالات کا اظہار وحدت اسلامی ہند کے امیر و مسلم پرسنل لا بورڈ کے رکن مولانا عطا الرحمان وجدی نے کیا ۔

اورنگ آباد میں مولانا وجدی نے میڈیا سے بات چیت کے دوران طلاق ثلاثہ سمیت ملت کو درپیش کئی مسائل پر تفصیلی گفتگو کی۔ طلاق ثلاثہ کے تعلق سے معروف عالم دین نے حکومت کی منشا پرسوال اٹھایا۔ ساتھ ہی لوک سبھا میں طلاق ثلاثہ بل پر اپوزیشن کانگریس اور دیگر سیاسی لیڈروں کے رول پر بھی نکتہ چینی کی ۔

طلاق ثلاثہ کی آڑ میں شریعت میں مداخلت کی کوششیں کی جارہی ہیں : مولانا عطا الرحمان وجدی

وحدت اسلامی ہند کے امیر و مسلم پرسنل لا بورڈ کے رکن مولانا عطا الرحمان وجدی

مولانا وجدی نے کہا کہ اس وقت ملک کا مسلمان خود کو خطرے میں محسوس کر رہا ہے، خوف اور بے چینی کی کیفیت طاری ہے، ایسے حالات میں امت کو یاسیت اور مایوسی سےنکالنا ضروری ہے، حوصلہ مندی اور مثبت سوچ کے ذریعے ہی حالات کا مقابلہ کیا جاسکتا ہے ۔ مسلم پرسنل لا بورڈ کے رکن کا کہنا تھا کہ طلاق ثلاثہ کی آڑ میں شریعت میں مداخلت کی جا رہی ہے۔ حکومت ہو یا عدلیہ کوئی بھی لا محدود نہیں ہے لیکن حد سے تجاوز کیا جا رہا ہے جوناقابل برداشت ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز