مسلمانوں کی ترقی اوربہتری کیلئے منصوبہ سازی حکومت کی ترجیحا ت میں شامل: نقوی

Nov 27, 2017 08:55 PM IST | Updated on: Nov 27, 2017 08:55 PM IST

ممبئی۔ مرکزی وزیر برائے اقلیتی امور وحج مختار عباس نقوی نے آج یہاں کہا کہ ملک میں مسلمانوں کی تعلیمی ترقی، سماجی بہتری اور روزگار کے ساتھ خود روزگار کی فراہمی موجودہ مودی حکومت کی ترجیحات میں شامل ہیں اور مستقبل قریب میں اس کے مثبت نتائج سامنے آئیں گے۔ وزیر موصوف نقوی نے مشہور تاریخی تعلیمی وثقافتی ادارہ انجمن اسلام میں خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ ’’میں منہ بھرائی کا الزام جھیل رہا ہوں، لیکن ایسے الزام لگانے والوں سے میں واضح کردینا چاہتا ہوں کہ میں اقلیتی فرقے کو اس کا حق دینے کی کوشش کررہا ہوں اوران علاقوں اورشہروں میں مرکزی اسکول اور ادارے کھولنے کاوعدہ پورا کرونگا،جہاں مسلمانوں کی اکثریت آباد ہے۔‘‘

مسٹرنقوی نے اعتراف کیا کہ گزشتہ نصف صدی کے زائد عرصے سے اقلیتی فرقے کے ساتھ تعصب برتا جاتا رہا ہے ،لیکن اب انہیں بھی احساس کمتری سے باہر نکلنا ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ ادارہ کے دورہ کے بعد اس بات کا اندازہ ہوا ہے کہ انجمن اسلام ایک صدی کے عرصہ سے قوم وملت کی تعلیمی وسماجی خدمت میں سرگرم ہے جوکہ قابل ستائش امر ہے، اسی طرح کے اداروں کی ملک کے شمالی علاقوں میں کام کرنے انتہائی ضرورت ہے۔ مختار عباس نقوی نے واضح طور پر کہا کہ انہوں نے جب سے اقلیتی وزارت سنبھالی ہے، ان کی کوشش ہے کہ ہرممکن طور اقلیتوں اور خصوصاً مسلمانوں کو تعلیمی میدان اور نئے ادارے قائم کرنے میں پیش آنے والی رکاوٹوں کو دور کیا جائے۔اس میں بہت حد کامیابی بھی حاصل ہورہی ہے اور مثبت نتائج سامنے آئے ہیں۔

مسلمانوں کی ترقی اوربہتری کیلئے منصوبہ سازی حکومت کی ترجیحا ت میں شامل: نقوی

اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی۔ فائل فوٹو

انہوں نے یقین دہانی کرائی کہ ہنرمند افراد کو خودروزگار سے وابستہ کرنے کی کوشش میں کامیابی ملی ہے، ایسے صنعتوں سے وابستہ کاریگروں اورفنکاروں کو ہم نے دوبارہ اپنے پیروں پر کھڑا کرنے میں مدد کی ہے۔حال میں دہلی میں ہنرمندوں کی نمائش کا اہتمام کیا ہے اورمستقبل میں بھی کرتے رہیں گے۔ اس سے قبل انجمن اسلام کے صدر ڈاکٹر ظہیر قاضی نے ادارہ کی جنگ آزادی سے وابستگی اورتعلیمی سرگرمیوں کے بارے میں سرگذاشت پیش کی اور بتایا کہ ادارہ مختلف شعبہ حیات میں سرگرم ہے۔وزیر موصوف نے انجمن اسلام کے صابو صدیق انجنیئرنگ کالج اور اکبر پیر بھائی کالج آف کامرس کا دورہ کیا اور طلباء واساتذہ سے تبادلہ خیال کیا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز