گئو رکشا کے نام پر غنڈہ گردی پر مختار عباس نقوی کا شدید ردعمل ، کہا :  ہمیں ایسے لوگوں سے آتا ہے نمٹنا

راجستھان میں مبینہ طور پر گئوركشكو ں کی طرف سے قتل کی بڑھتی ہوئی وارداتوں کے درمیان مرکزی اقلیتی وزیر مختار عباس نقوی نے آج کہا کہ مودی حکومت ' خوشامدانہ سیاست کے بجائے ملک کے ہر شہری کی سلامتی کو یقینی بنا نا چاہتی ہے

Dec 17, 2017 08:12 PM IST | Updated on: Dec 17, 2017 08:12 PM IST

کشن گڑھ باس: راجستھان میں مبینہ طور پر گئوركشكو ں کی طرف سے قتل کی بڑھتی ہوئی وارداتوں کے درمیان مرکزی اقلیتی وزیر مختار عباس نقوی نے آج کہا کہ مودی حکومت ' خوشامدانہ سیاست کے بجائے ملک کے ہر شہری کی سلامتی کو یقینی بنا نا چاہتی ہے لیکن کچھ طاقتیں مذہب کے نام پر ملک کو بانٹ کر امن کا ماحول خراب کرنا چاہتی ہیں۔

مسٹر مختار نقوی نے راجستھان میں ضلع الور کے کشن گڑھ باس میں منعقد ہ 'پروگریسیو پنچایت سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 'ہم یہ یقین دلانا چاہتے ہیں کہ ملک کے ہر شہری کی سلامتی ہماری ترجیح ہے۔ کچھ طاقتیں لوگوں کا سیاسی استحصال کرنے کے لئے مذہب کے نام پر نفرت کی دیوار کھڑی کرکے ملک کے لوگوں کوتقسیم کرنا چاہتی ہیں"۔ ایسے عناصر کو سخت پیغام دیتے ہوئے مسٹر نقوی نے کہا کہ انہیں اس طرح کے لوگوں سے نمٹنا آتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ "ہم سب بھارت ما تا کی اولاد ہیں، لہذا ہم آہنگی اور ترقی کے ماحول کو نقصان پہنچانے والے عناصر کے خلاف سب کو متحد ہونا چاہئے"۔

گئو رکشا کے نام پر غنڈہ گردی پر مختار عباس نقوی کا شدید ردعمل ، کہا :  ہمیں ایسے لوگوں سے آتا ہے نمٹنا

فائل فوٹو

قابل ذکر ہے کہ ضلع الور میں اپریل میں مبینہ گئوركشكو ں نے پہلو خان پر گائے کی اسمگلنگ کا الزام لگا کر اس کو پیٹ پیٹ کر نیم مردہ کردیا تھا، جس کی بعد میں موت ہوگئی تھی اور نومبر میں عمر خان کو گولی مار کر قتل کر دیا تھا۔ اس کے علاوہ حال ہی میں راجسمند میں مبینہ طور پر لو جہاد کے نام پر مغربی بنگال کے ایک مزدورشخص کو قتل کرکے جلادیا گیا تھا۔ ان واقعات سے اقلیتوں میں خوف کا ماحول ہے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز