ممبئی میں پھیری والوں کا ایم این ایس کی غنڈہ گردی کے خلاف اعلان جنگ ، کیا یہ فیصلہ  ؟

Oct 29, 2017 02:01 PM IST | Updated on: Oct 29, 2017 02:01 PM IST

ممبئی : ممبئی میں پھیری والوں نے راج ٹھاکرے کے خلاف جنگ کا اعلان کردیا ہے ۔ راج ٹھاکرے کی پارٹی ایم این ایس کے مظالم سے تنگ آکر پھیری والوں نے فیصلہ کیا ہے کہ اب وہ ایک ساتھ مل کر راج ٹھاکرے کی غنڈہ گری کا سامنا کریں گے ۔ جس کی پہلی مثال گزشتہ روز اس وقت دیکھنے کو ملی جب احتجاج میں رخنہ ڈالنے کی کوشش کررہے ایم این ایس کے پانچ کارکنوں کی پھیری والوں نے جم کر پٹائی کردی ۔

گزشتہ کئی سالوں سے ممبئی کی سڑکوں پر دکان لگانے والے پھیری والوں نے ایم این ایس کی غنڈہ گردی سے تنگ آکر اب راج ٹھاکرے کے خلاف آر پار کی لڑائی کا فیصلہ کیا ہے ۔ اسی سلسلہ میں گزشتہ روز ممبئی میں پھیری والوں کی ایک مہا سبھا کا انعقاد کیا گیا ، جس میں ایک ساتھ مل کر راج کا مقابلہ کرنے کے فیصلہ کا اعلان کیا گیا ۔

ممبئی میں پھیری والوں کا ایم این ایس کی غنڈہ گردی کے خلاف اعلان جنگ ، کیا یہ فیصلہ  ؟

سنجے نروپم نے پروگرام میں بولتے ہوئے راج ٹھاکرے کی ایم این ایس کی غنڈہ گردی کیلئے وزیر اعلی فرنویس اور ریاستی حکومت کو ذمہ دار قرار دیا ۔ ادھر راج ٹھاکرے نے ایک مرتبہ پھر شمالی ہندوستانیوں کو نشانے پر لیا ہے۔ راج ٹھاکرے نے کہا کہ چٹھ کے موقع پر جتنی بھیڑ ممبئی اور آس پاس کے علاقوں میں دیکھنے کو ملتی ہے ، اس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ یوپی اور بہار کے لوگ ممبئی پر قبضہ کرنا چاہتے ہیں ۔

خیال رہے کہ الفنسٹن برج حادثہ کے بعد سے ہی راج ٹھاکرے کی ایم این ایس نے ممبئی میں کہرام مچا رکھا ہے ۔ ریلوے اسٹیشن کے احاطہ میں پھیری والوں کی جم کر پٹائی کررہے ہیں ۔ پھیری والوں نے صاف کردیا ہے کہ اگر انہیں سیکورٹی نہیں دی جائے گی تو وہ خود اپنی حفاظت کیلئے راج کے غنڈوں سے مقابلہ کریں گے ۔ ادھر انتظامیہ نے ممکنہ ٹکراو کے پیش نظر پولیس اہلکاروں کو الرٹ رہنے کی ہدایت جاری کی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز