اقلیتی فرقے کی تعلیمی میدان میں ترقی کے لئے جدوجہد انتہائی ضروری: ممبئی پولیس کمشنر

Sep 23, 2017 05:27 PM IST | Updated on: Sep 23, 2017 05:27 PM IST

ممبئی۔ مسلمانوں کی تعلیمی میدان میں ترقی وفروغ کے لیے جدوجہد انتہائی ضروری ہے اور اس کے لیے مسلم رہنماؤں اور سیاست دانوں کے ساتھ ساتھ علمائے کرام کو بھی اہم رول ادا کرنا ہوگا ،اس کا اظہار ممبئی کے پولیس کمشنر دتا تریہ پڈسالگیکر نے گزشتہ شب جنوبی ممبئی کے اسلام جمخانہ میں منعقد ایک تعلیمی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ،جس کا انعقاد سیوا نامی تنظیم نے کیا تھا۔  انہوں نے مزید کہا کہ دنیا میں تیزی سے تعلیمی ترقی ہو رہی ہے اور ٹکنالوجی کی ترقی نے کئی مراحل کو آسان بنادیا ہے ،صرف تعاون اور حمایت کی ضرورت ہے۔

پولیس کمشنر نے یقین دلایا کہ شہر میں اور خصوصی طورپر مسلم اکثریتی علاقوں میں منشیات مافیا کو زیر کرنے کے لیے پولیس نے مقامی لوگوں کے تعاون سے بھر پور کارروائی کی ہے ،اس کے لیے انہوں نے سیوا کے روح رواں اور سابق ایم ایل اے ایڈوکیٹ یوسف ابراہانی اور حضرت مولانا معین اشرف کی کوشش کی ستائش بھی کی۔ انہوں نے سیوا کے ذریعے اساتذہ کی حوصلہ افزائی اور تعلیمی ،طبّی اور سماجی اصلاح کے لیے سرگرم شخصیات کو اعزاز سے نوازے جانے پر ادارے کا شکریہ ادا کیا ،اس موقع پر پولیس کمشنر کی بہترکارکردگی کے لیے ان کی شرکاء نے کھڑے رہ کر عزت افزائی کی کیونکہ ان کے دورمیں شہر میں امن وضبط کی صورتحال بہتر رہی اور سبھی تہوار پُرامن طورپر منائے گئے اور کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا۔

اقلیتی فرقے کی تعلیمی میدان میں ترقی کے لئے جدوجہد انتہائی ضروری: ممبئی پولیس کمشنر

ممبئی پولیس کمشنر پڈسالگیکر، فائل فوٹو، تصویر، این ڈی ٹی وی ڈاٹ کام

سابق مرکزی وزیر گروداس کامت نے کہا کہ اساتذہ کی عزت افزائی ایک بہترین کام ہے کیونکہ والدین کے بعد استاد ہی کا اعلیٰ مقام ہے جوکہ بچوں کی تربیت کے لیے سب سے زیادہ کوشش کرتے ہیں اور اس کا کوئی بدلہ نہیں ہوتا ہے کیونکہ وہ ایک بے لوث خدمت ہوتی ہے۔ سابق وزیر عارف نسیم خان نے کہا کہ اسلام کی بنیاد انسانیت پر مبنی ہے اور غیرمذہب کے لوگوں ،رشتہ داروں اور پڑوسیوں کے حقوق ہیں اور جو لوگ اسلام کو بدنام کرنے کی کوشش کرتے ہیں اور مسلمان نہیں ہیں اور وہ اسلام کا حصہ نہیں ہیں۔ ایم ایل اے امین پٹیل نے کہا کہ مسلمانوں کی تعلیمی میدانوں ترقی کے لیے سبھی کو مل جل کرجدوجہد کرنا چاہئے ۔

اس موقع پر سیوا کے صدرایڈوکیٹ یوسف ابراہانی نے تعلیمی میدان میں ہم قوم کی ترقی کے لیے کوشش کرنے کے ساتھ ساتھ ہمیں اپنے معاشرے کی برائیوں اور خرافات کو بھی دورکرنا چاہئے جس میں منشیات سے معاشرے کو نجات دلانے کے لیے اہم کام کرنا چاہئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز