ممبئی حادثہ: لاشوں کی پیشانی پر نمبر لکھنے پر اسپتال انتظامیہ کی مذمت/ ورثاء سخت ناراض

ممبئی کے کے ای ایم اسپتال نے لاشوں کی پیشانی پر نمبر لکھ دیئے ان کی تصاویر کو’پبلک ڈسپلے‘ پر چسپاں کردیا۔

Sep 30, 2017 08:39 PM IST | Updated on: Sep 30, 2017 08:39 PM IST

ممبئی۔ ممبئی میں الفسٹن ریلوے اسٹیشن پرجمعہ کو فٹ اوورپل پر ہونے والی بھگدڑمیں مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 23ہوچکی ہے اورجبکہ جنوبی ممبئی کے اسپتال کنگ ایڈورڈ میموریل(کے ای ایم )اسپتال انتظامیہ کی شدید مذمت کی جارہی ہے کیونکہ اس نے مردہ لوگوں کی پیشانی پرنمبردرج کیے ، جس نے ایک تنازعہ پیدا کیا ہے۔ ممبئی کے کے ای ایم اسپتال نے لاشوں کی پیشانی پر نمبر لکھ دیئے ان کی تصاویر کو’پبلک ڈسپلے‘ پر چسپاں کردیا ،مہلوکین کے رشتہ دارکے ای ایم اسپتال کی اس حرکت سے سخت ناراض ہیں۔اور اسپتال کے اس بے حس رویے پر نشانہ بنایاجارہا ہے۔

حالانکہ اسپتال انتظامیہ نے دعویٰ کیا ہے کہ افراتفری سے بچنے کے لئے ایسا کیا گیا تھا۔اسپتال انتظامیہ نے کہا کہ فلیکس بورڈ پرتصویر چسپاں کرنے کا مقصد یہ تھا کہ لوگ اپنے رشتہ داروں کو آسانی سے شناخت کرسکیں۔ سوشل میڈیا پر کہا گیا ہے کہ بھگدڑ خطرناک ہے ،لیکن اسپتال کا رویہ اس سے زیادہ دکھ بھرا ہے۔ اسپتال انتظامیہ نے کہا کہ 22 لاشوں کی شناخت کرنا بہت مشکل ہے کیونکہ لوگ بڑی تعداد میں آ رہے تھے،کے ای ایم اسپتال کے فارسنک سائنس ڈپارٹمنٹ کے سربراہ ڈاکٹر ہریش پاتھک نے کہا کہ یہ انتہائی غیر معمولی اور پیچیدہ کام ہوتا ہے ۔اسپتال انتظامیہ کے فیصلے کا دفا ع کیا اور ایک بیان جاری کیا ہے۔اور انہیں اس میں کوئی برائی نہیں نظر آرہی ہے۔

ممبئی حادثہ: لاشوں کی پیشانی پر نمبر لکھنے پر اسپتال انتظامیہ کی مذمت/ ورثاء سخت ناراض

حالانکہ اسپتال انتظامیہ نے دعویٰ کیا ہے کہ افراتفری سے بچنے کے لئے ایسا کیا گیا تھا۔: پی ٹی آئی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز