ممبئی : داڑھی کٹوانے سے انکار کرنے پر مسلم طالب علم سید عمران کو باکسنگ مقابلہ میں شرکت سے روک دیا گیا

Jan 11, 2017 08:40 PM IST | Updated on: Jan 11, 2017 08:41 PM IST

ممبئی : ممبئی یونیورسٹی نے ایک مسلم طالب علم کو باکسنگ مقابلہ سے صرف اس وجہ سے باہر کا راستہ دکھادیا ، کیونکہ اس نے داڑھی کٹوانے سے صاف طور پر انکار کردیا ۔ ہندوستان ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق ممبئی کے جی آر پاٹل کالج کے بی کام کے طالب علم سید عمران علی گزشتہ پیر کو ایک میچ میں حصہ لینے کیلئے میرین لین میں واقع کالج کے اسپورٹس پویلین پہنچے،لیکن یونیورسٹی حکام نے یہ کہتے ہوئے ان کو مقابلہ میں حصہ لینے سے روک دیا کہ پہلے وہ داڑھی کٹوائیں ۔ داڑھی کٹوائے بغیر ان کو مقابلہ میں شریک نہیں ہونے دیا جائے گا۔

یونیورسٹی انتظامیہ کی طرف سے بین الاقوامی امٹيور باکسنگ ایسوسی ایشن کے ذریعہ داڑھی کٹوانے کے قانون کا حوالہ دیا گیا ۔ ممبئی یونیورسٹی میں فزیکل ایجوکیشن اینڈ اسپورٹس کے ڈائریکٹر اتم کیندر کے مطابق ہندوستانی باکسنگ میں باکسر کو مقابلہ سے پہلے کلین شیو ہونا ضروری ہے۔

ممبئی : داڑھی کٹوانے سے انکار کرنے پر مسلم طالب علم سید عمران کو باکسنگ مقابلہ میں شرکت سے روک دیا گیا

علامتی تصویر

ادھر عمران علی کا کہنا ہے کہ ان کو اس ضابطہ کے بارے میں علم نہیں تھا۔ عمران کے مطابق وہ گزشتہ سات سالوں سے ریاستی سطح سے لے کر قومی سطح تک کے کراٹے ، ٹیكواندو اور کک باکسنگ مقابلوں میں حصہ لیتے آ رہے ہیں ، لیکن ان کی داڑھی کبھی کوئی مسئلہ نہیں بنی ۔ خیال رہے کہ عمران ممبئی میں مارشل آرٹس ٹریننگ سینٹر بھی چلاتے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز