مسلمانوں کی بھلائی کیلئے بی جے پی میں بھی شامل ہوسکتا ہوں ، لوگ مجھے ایجنٹ ہی کیوں نہ کہیں : عامر رشادی

گجرات اسمبلی الیکشن سے پہلے سیاسی سر گرمياں تیز ہو گئی ہیں ۔ ایسے میں بی جے پی اور کانگریس دونوں پر مسلمانوں کے ساتھ امتیازی سلوک برتنے کا الزام لگایا جا رہا ہے

Nov 09, 2017 10:43 PM IST | Updated on: Nov 09, 2017 10:45 PM IST

احمد آباد : گجرات اسمبلی الیکشن سے پہلے سیاسی سر گرمياں تیز ہو گئی ہیں ۔ ایسے میں جہاں بی جے پی اور کانگریس دونوں پر مسلمانوں کے ساتھ امتیازی سلوک برتنے کا الزام لگایا جا رہا ہے وہیں دوسری طرف راشٹريہ علماء كونسل کی جانب سے ایک پریس کانفرنس کا اہتمام کر کے کانگریس اور بی جے پی پر مسلمانوں کو ووٹ بینک کے طور پر استعمال کرنے کا الزام لگایا گیا ۔

راشٹريہ علماء كونسل کے صدرعامر رشادی مدنی نے کہا کہ گجرات میں مسلمانوں کی 10 فیصد آبادی ہونے کے باوجود مسلمانوں کی کوئی سنوائی نہیں ہو رہی ۔ انہوں نے کانگریس پر حملہ بولتے ہوئے کہا کہ گجرات میں دلت برادری کے مطالبات کو لے کر کانگریس پریشان ہے اور جگنیش میوانی سے ملاقات کر رہی ہے، لیکن مسلمانوں کے مسئلے کو حل کرنے کے لئے کسی بھی طریقہ کی پہل نہیں کی جا رہی ہے ۔

مسلمانوں کی بھلائی کیلئے بی جے پی میں بھی شامل ہوسکتا ہوں ، لوگ مجھے ایجنٹ ہی کیوں نہ کہیں : عامر رشادی

صحافیوں کے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ اگر ہمارے قوم کی بھلائی بی جے پی کے ساتھ جڑنے میں  ہے ، تو راشٹریہ علماء كونسل بی جے پی کے ساتھ وابستہ ہونے کیلئے تیار ہے۔ ایسے میں اگر کوئی مجھے بی جے پی کا ایجنٹ کہتا ہے ، تو کہے ، مجھے کوئی فرق نہیں پڑتا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز