اقلیتی وزیر نے ملک میں خوف کا ماحول ہونے کا دعوی کرنے والوں کو لیا آڑے ہاتھوں

Aug 19, 2017 08:02 PM IST | Updated on: Aug 19, 2017 08:02 PM IST

گاندھی نگر۔ اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مملکت مختار عباس نقوی نے ملک میں خوف کا ماحول ہونے کا الزام لگانے والوں پر آج یہاں جم کر حملہ کیا۔ مسٹر نقوی نے ریاستی حکومت کے اقلیتی محکمہ کے خزانہ اور ڈیولپمنٹ کارپوریشن کے پروگرام میں 535 مستفدین کو چار کروڑ 86 لاکھ کے چیک تقسیم کے لئے منعقد پروگرام میں کہا کہ کچھ مایوس اور پریشان افراد جھوٹ پر مبنی خوف کا ماحول پیدا کرکے ترقی اوراعتماد سے پرُ ماحول کے خلاف سازش کرنے میں لگے ہوئے ہیں۔ ہمیں ایسے لوگوں سے محتاط رہنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ مرکز کی مودی حکومت اقلیتوں کی چہارطرفہ ترقی کے لئے اور انہیں باختیار بنانے کے ساتھ ساتھ ان کے وقار میں اضافہ کرتے ہوئے ترقی کی پالیسی پر چل رہی ہے۔ اگر پہلے کی حکومتوں نے اقلیتوں کی ترقی کے لئے ایمانداری سے کوشش کی

ہوتی تو آج کوئی بھی اقلیتی خاندان غریب نہیں ہوتا۔ گزشتہ 70 سال میں جہاں ترقی کی روشنی نہیں پہنچی وہاں مودي حکومت نے ترقی کا اجالا پھیلایا دیا ہے۔ حکومتی پالیسیوں میں غریبوں پر زیادہ توجہ دی جا رہی ہے۔

اقلیتی وزیر نے ملک میں خوف کا ماحول ہونے کا دعوی کرنے والوں کو لیا آڑے ہاتھوں

اقلیتی وزیر گجرات کے گاندھی نگر میں ایک پروگرام میں۔ تصویر اقلیتی وزیر کے ٹوئٹر پیج سے۔

مسٹر نقوی نے کہا، 'کچھ لوگ ملک میں خوف کا ماحول ہونے کی جھوٹی باتیں پھیلا رہے ہیں۔ میں مانتا ہوں کہ آج ملک میں بدعنوان، اقتدار کے دلالوں، بچولیوں، گھوٹالے بازوں اور غریبوں کو لوٹنے والوں کے درمیان خوف ہے۔ اس موقع پر وزیر اعلی وجے روپاني نے دعوی کیا کہ گجرات میں اقلیتی طبقے سب سے محفوظ ہیں۔ کانگریس کی حکومتوں نے اس طبقے کو اب تک صرف ووٹ بینک ہی سمجھا ہے اور انہیں مواقع سے محروم رکھنے کا گناہ کیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز