منموہن سنگھ کی حب الوطنی پر شبہ کی کوئی گنجائش نہیں: این سی پی سربراہ شرد پوار

ناگپور۔ نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی کے سربراہ اور قدآور لیڈرشردپوار نے وزیراعظم نریندرمودی اور بی جے پی کے ذریعے سابق وزیراعظم ڈاکٹر منموہن سنگھ پر گجرات اسمبلی کے لیے پاکستان سے سازبازکرنے کے الزام پر سخت رُخ اختیار کرتے ہوئے بھارتیہ جنتاپارٹی کو شرم دلائی اور کہا کہ سابق وزیراعظم منموہن سنگھ کی حب الوطنی پر شبہ کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔

Dec 12, 2017 09:32 PM IST | Updated on: Dec 12, 2017 09:32 PM IST

ناگپور۔ نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی کے سربراہ اور قدآور لیڈرشردپوار نے وزیراعظم نریندرمودی اور بی جے پی کے ذریعے سابق وزیراعظم ڈاکٹر منموہن سنگھ پر گجرات اسمبلی کے لیے پاکستان سے سازبازکرنے کے الزام پر سخت رُخ اختیار کرتے ہوئے بھارتیہ جنتاپارٹی کو شرم دلائی اور کہا کہ سابق وزیراعظم منموہن سنگھ کی حب الوطنی  پر شبہ کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔ این سی پی رہنما پوار آج یہاں مہاراشٹر اسمبلی کے سرمائی اجلاس کے دوسرے روز کانگریس ،این سی پی آرپی آرئی (کاوڑے)،سماج وادی پارٹی،کسان مزدورپارٹی اور کمیونسٹ پارٹی(ایم ) اور دیگر اپوزیشن پارٹیوںکی بی جے پی قیادت کی مرکزی اور ریاستی حکومتوں کے خلاف کسانوں کی ایک مشترکہ جن آکروش ریلی سے خطاب کررہے تھے ۔

اس موقع پر شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے این سی پی سربراہ اور سابق مرکزی وزیر نے مزید کہا کہ وزیراعظم مودی اور بی جے پی کو منموہن سنگھ جیسے حب الوطن اور قدآوررہنماءکے خلاف پاکستان سے سازباز کا الزام لگاتے ہوئے شرم آنی چاہئے ۔انہوںنے اس بات پر تشویش کا اظہار کیا کہ ملک کے اندرونی معاملات میں بیرونی ممالک کونہ گھسیٹنے کی ایک روایت رہی ہے ،لیکن مودی نے اس روایت کو بالائے طاق رکھ دیا ہے جوکہ افسوس ناک امر ہے۔اس مظاہرہ میں ہزاروں کی تعداد میں کسانوںاور سبھی پارٹیوں کے ورکرس نے شرکت کی جبکہ کانگریس کے سنیئر لیڈرغلام نبی آزاد،کانگریس پردیش صدراشوک چوہان ،سابق وزیراعلیٰ پرتھوی راج چوہان،اپوزیشن لیڈر رادھے کرشن وکھے پاٹل ،کونسل میں اپوزیشن لیڈر دھنجے منڈے ،این سی پی لیڈر اجیت پوار ،ایم پی سپریہ پوار ،سابق مرکزی وزیر پرفل پٹیل اور سماج وادی پارٹی کے ابوعاصم اعظمی ،سابق وزیر عارف نسیم خان اوردیگر لیڈران شامل تھے۔

منموہن سنگھ کی حب الوطنی پر شبہ کی کوئی گنجائش نہیں: این سی پی سربراہ شرد پوار

نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی کے سربراہ اور قدآور لیڈرشردپوار: فائل فوٹو۔

شردپوار نے مہاراشٹر میں کسانوں کی قرض معافی ،کسانوں کی خودکشی ،مہنگائی کے مسائل ساتھ ساتھ سابق وزیراعظم منموہن سنگھ پر مودی کے الزام پر سخت لہجہ اختیار کرتے ہوئے مرکزی اور ریاستی حکومتوںکو آڑے ہاتھوں لیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ افسوس ناک الزام ہے کہ گجرات کے الیکشن میں کامیابی کے لیے کانگریس پاکستان سے مدد کی طلب گار ہے اور دہلی میں منی شنکر ایئر کی رہائش گاہ پر پاکستان کے سابق وزیر خارجہ قصوری اور سفارت کارکی میٹنگ میں سابق وزیراعظم اور سابق نائب صدرحامد انصاری کی موجودگی کو غلط رُخ دینے پر پوار نے شدید ناراضگی ظاہر کی ہے۔

انہوں نے یوپی اے کی حکومت کے ذریعہ کسانوں کے قرض معافی کاذکر کرتے ہوئے کہا کہ 10سال قبل ایوت محل میں ایک کسان کی خودکشی کے بعد منموہن سنگھ نے اس کے اہل خانہ سے ملاقات کی تھی۔اور اسکے بعد آٹھ دنوں میں ملک بھر کے کسانوں کا 70ہزارکروڑ قرض معاف کردیا گیا اورمہاراشٹر میں ہی آٹھ ہزار کروڑ قرض معاف کیے گئے۔شردپوا ر مہاراشٹر کے وزیراعلیٰ دیویندر فڑنویس کے ذریعے ایک این سی پی لیڈر کو بدعنوانی کی جانچ کرانے کے تعلق دھمکی دینے پر سخت انداز میں کہا کہ وزیراعلیٰ کی حیثیت سے انہیں کارروائی کرنے کا حق ہے،لیکن دھمکی آمیز رویہ اختیار کرنے کا انہیں کوئی حق نہیں ہے ۔اور یاد رکھنا چاہئے اقتدار حاصل کرنے کی طاقت اپوزیشن میں بھی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز