مہاراشٹر : اقلیتی طلبہ کی اسکالر شپ کیلئے دومیسائل سرٹیفکیٹ کی شرط منسوخ

Nov 06, 2017 10:35 PM IST | Updated on: Nov 06, 2017 10:35 PM IST

ممبئی: امسال سے حکومت مہاراشٹرکے ذریعے پوسٹ میٹرک ، پری میٹرک اقلیتی طلباء کے اسکالر شپ کیلئے دومیسائل سرٹیفکٹ کی لازمی شرط عائد کی تھی ، جس سے ہزاروں اقلیتی طلباء وطالبات کو پریشانی ہورہی تھی ، آج منترالیہ میں سماج وادی پارٹی رہنما ورکن اسمبلی جناب ابوعاصم اعظمی نے اس معاملے میں ریاستی وزیر تعلیم ونود تاؤڑے سے ملاقات کی ، اس مو قع پر وزیر ٹرانسپورٹ دواکر راؤتے بھی موجو دتھے ۔

سماج وادی پارٹی رہنما ابوعاصم اعظمی ایم ایل اے نے کہا کہ دومیسائل سرٹیفکٹ کی شرط عائد کرنے کی وجہ سے طلبا وطالبات تحصیلدار آفس دوڑ رہے ہیں ، اسلئے ڈومیسائل سرٹیفکٹ کی شرط ہٹائی جائے ۔ مسٹر ابوعاصم اعظمی ایم ایل اے کے اس مطالبہ کی وزیر ٹرانسپورٹ دواکر راؤتے نے بھی تائید کی اور کہا کہ جب آدھار کارڈ کے ذریعہ اسکالر شپ حاصل کرنے والے طلباء وطالبات کے بنک اکاؤنٹ منسلک ہیں ، تو پھر ڈومیسائل سرٹیفکٹ کو لازمی کرنے کی ضرورت کیا ہے ۔

مہاراشٹر : اقلیتی طلبہ کی اسکالر شپ کیلئے دومیسائل سرٹیفکیٹ کی شرط منسوخ

وزیر تعلیم ونود تاؤڑے نے اس دوران وزارت تعلیم کے اعلیٰ افسران سے اس معاملے میں پوچھ تاچھ اور ڈومیسائل سرٹیفکٹ کو لازمی قرار دینے کے بارے میں جو از طلب کیا ۔بعد ازاں انہوں نے احکامات جاری کئے کہ جن طلباء وطالبات کے بنک اکاؤنٹ آدھار کارڈ سے منسلک ہیں ان کو نہ صرف امسال بلکہ ہمیشہ کیلئے دومیسائل سرٹیفکٹ کی شرط سے مستشنیٰ کیا جائے ۔انہوں نے اس سلسلے میں ضروری ہدایات جاری کرنے کا افسران کو حکم دیا ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز